ترک ساحل پر کشتی پلٹنے سے یورپ جانے والے پانچ ایرانی و افغان تارکین وطن ہلاک

استنبول:یونان کے راستے یورپ جانے والے پانچ تارکین وطن اس وقت ڈوب کر ہلاک ہو گئے جب ان کی کشتی جس میں 14افغان و ایرانی تارکین وطن کا گروپ سوار تھا ترک ساحل کے قریب پلٹ گئی۔
کشتی پلٹنے کا یہ حادثہ بدھ کی شام میں پیش آیا۔ جیسے ہی وہ کشتی پلٹی اورترک ساحلی محافظوں کے غوطہ خوروں نے مدد کی پکار سنی انہوں نے فوراً پانی میں چھلانگ لگا دی اور 9تارکین وطن کو ڈوبنے سے بچا لیا جبکہ پانچ افراد کو وہ بچا نہ سکے اور انہیں لاشوںکی شکل میںہی باہر نکالا جا سکا۔یہ گروپ جو افغان اور ایرانیوں پر مشتمل تھا ، بحیرہ ایجیئن کے یونانی جزیرہ لزبوس پہنچنے کی کوشش کر رہا تھا۔یورپی یونین نے غیر قانونی طریقہ سے نقل مکانی پر قابو پانے کے لیے ترکی کو کئی بلین یورو کی امداد کی پیشکش کی ہے۔
اس ضمن میں پیر کے روز معاہدہ بھی طے پاگیا۔جس کی رو سے ترکی نے مزید مالی فنڈ، ترکوں کے لیے ویزوں میں تیزی سے نرمی لانے اور یورپی یونین کی رکنیت کے لیے طویل عرصہ سے تعطل کے شکار ترک مذاکرات مکمل کرنے کے عوض تمام غیر قانونی تارکین وطن کو اپنے یہاں واپس لینا منظو ر کر لیا۔ اس معاہدہ کا مقصد غیر قانونی ہجرت پر قابو پانا اوربحیرہ ایجیئن کے خطرناک سفر پر مہاجرین کو بھیجنے والے انسانی اسمگلروں کے دھندے پر کاری ضرب لگانا ہے۔لیکن اس کے باوجودحالیہ دنوں میں تارکین وطن نے ترکی کے ساحل سے گذرنے کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Five iranians afghans drown trying to reach greece from turkey in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply