دوبئی کی ایک عدالت نے تین ہندوستانیوں کو پانچ پانچ سو سال قید کی سزا سنائی

دوبئی: دوبئی کی عدالت نے تین ہندوستانیوں کو فریب دہی کے معاملہ میں 500سال قید کی سزا سنائی ہے۔ 37سالہ سڈنی لیموس اوران کے25سالہ اکاؤنٹ اسپیشلسٹ ریان ڈیسوزا پر،جو گوا کے رہائشی ہیں، ہزاروں سرمایہ کاروں کو 200ملین ڈالر کا دھوکا دیا تھا۔
اور اسی معاملہ میں ان دونوں ہندوستانیوں کوسزا سنائی گئی ہے۔لیموس نے اپنی کمپنی کے توسط سے لوگوں کو للچایا کہ وہ 25ہزار ڈالر کیس رمایہ کاری پر انہیں 120فیصد کا کم از کم ریٹرن دے گی۔ دوبئی مین عام طور پر بڑا صاف ستھرا کاروبار ہوتا ہے اس لیے لوگ کمپنی کے جھانسے میں آگئے اور دھڑا دھڑ سرمایہ کاری کر بیٹھے۔
لیکن ان سب کو ٹھگ لیا گیا۔ عدالت کی اسپیشل بنچ کے سربراہ جج ڈاکٹر محمد حنفی نے لیموس کی بیوی ولانی لیموس کو بھی اس کے غائبانہ میں 517سال کی سزا سنائی۔
اس پر الزام تھا کہ وہ ایکسنشیل کے سربمہر دفتر میں گھس کر دستاویزات لے گئی تھی۔ لیموس کوسب سے پہلے دسمبر2016میں گرفتار کیا گیا تھا لیکن بعد میں ضمانت پر چھوڑ دیا گیا تھا۔
لیکن گذشتہ سال جنوری مین ہی اسے پھر گرفتار کر لیا گیا۔سجولم کے رہائشی ریان ڈی سوزا کو گذشتہ سال فروری میں گرفتار کیا گیا تھا۔ لیموس اس کی بیوی لیوانی اور محتسب ریان کو515کیسوں میں ایک سال فی کیس کے حساب سے515سال قید کی سزا سنائی گئی ہے۔
معاملہ کی سماعت گذشتہ سال25دسمبرکو شروع ہوئی تھی اور اتوار کو مکمل ہونے کے بعد فیصلہ بدھ تک کے لیے محفوظ کر لیا گیا تھا۔

Title: five hundred years in jail for dubai forex fraudsters | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply