ایف بی آئی نے کنساس میں ہندوستانی انجینیر کے قتل کو نسلی تشدد مان کر تحقیقات شروع کر دی

کنساس سٹی:امریکہ کے کنساس میں گزشتہ بدھ کو ایک ہندستانی انجینئر اور اس کے معاون پر ہوئی فائرنگ کے واقعہ کی تحقیقات جاری ہے اور اس واقعے کی تحقیقات نسلی تشدد کے طور پر کی جا رہی ہے۔ وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف بی آئی) نے بتایا کہ اس فائرنگ میں 32 سالہ شری نواس کوچی بھوتلا کی موت ہو گئی تھی جبکہ انہی کےہم عمر آلوک مداسانی زخمی ہو گئے تھے۔
یہ دونوں ایک امریکی کمپنی گاریمن میں کام کرتے تھے۔ اس فائرنگ میں ایک دیگر شخص ایان گرلو ٹ زخمی ہو گئے تھے۔ ایف بی آئی نے ایک بیان میں بتایا کہ ابتدائی تحقیقات کی بنیاد پر اس واقعے کی تحقیقات نسلی تشدد کا واقعہ سمجھ کر کی جا رہی ہے۔ واشنگٹن میں ہندستانی سفارت خانے نے اس واقعہ کے سلسلے میں امریکی حکومت کے سامنے تشویش ظاہر کی ہے اور اس معاملے کی تفصیلی تحقیقات کرانے کی اپیل کی ہے۔
واضح رہے کہ شری نواس کوچی بھوتلا اور ان کے معاون آلوک مداسانی پر گولی چلانے والے شخص نے چِلّا کر کہا تھا، ’میرے ملک سے نکل جاؤ۔‘ واقعہ کے پانچ گھنٹوں کے بعد فائرنگ کرنے والے ملزم ایڈم پنریٹن کو گرفتار کر لیا گیا تھا۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Fbi investigating shootings of indian men in kansas as hate crime in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply