اٹلی نے ایک مصری عالم دین ابو عمر کے اغوا کی مجرم سابق سی آئی اے جاسوس کی سزا میں تخفیف کر دی

روم:اٹلی کے صدر سرجیو میٹاریلا نے آج کہا کہ انہوں نے امریکہ کی سنٹرل انٹلی جنس ایجنسی (سی آئی اے) کی سابق افسر سبرینا ڈی سوزا کو جزوی معافی دے دی ہے۔ سبرینا ڈی سوزا کو اٹلی کے ایبسنٹیا میں مصر کے ایک مذہبی لیڈر کا اغوا کرنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔ مسٹر میٹاریلا کی جانب سےسبرینا ڈی سوزا کی سزا کی مدت کو چار سال سے گھٹا کر تین سال کئے جانے کے بعد وہ اب جیل کے بدلے کسی اور پابندی کے لیے درخواست دے سکتی ہیں۔
امریکہ۔پرتگال کی دوہری شہریت والی سبرینا ڈی سوزاکو پرتگال پولیس نے گزشتہ ہفتے حراست میں لیا تھا۔ تاہم انہوں نے اغوا میں اپنے ملوث ہونے سے انکار کیا تھا۔ سبرینا ڈی سوزا کی وکیل نے کہا کہ مسٹر میٹاریلا کے فیصلے کے بعد اسے جیل سے رہا کر دیا گیا ہے اور اب انہیں کسی کے حوالے نہیں کیا جائے گا۔ سبرینا ڈی سوزا کو امریکی صدربش کے دورا اقتدار میں ایک مصری عالم دین ابو عمر کی غیر معمولی انداز میں حوالگی کا مجرم قرار دیا گیا تھا۔لیکن ڈی سوزا کا ہمیشہ یہ موق رہا کہ وہ سینیئر بش کے جنگی جرائم میں شامل یا معاون نہیں تھیں۔ انہیں قربانی کا بکرا بنایا گیا ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Ex cia officer pardoned for role in 2003 kidnapping of terrorism suspect in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply