نیویار ک میں ایک ٹرک ڈرائیور نے بائیک سواروںکو روند ڈالا،8ہلاک، کئی زخمی

نیو یارک: یہاں ایک مشتبہ دہشت گردانہ حملہ میں اس وقت کم از کم8افراد ہلاک اور درجن بھر سے زائد افراد زخمی ہو گئے جب ایک ٹرک ڈرائیور نے بائیکوں کے لیے مخصوص مصروف سڑک پر ٹرک موٹر سائیکل سواروں پر چڑھا دیا۔
نیویار کے مئیر بی دی بلاسیو نے ایک پریس کانفرنس میں بتایا کہ اس واردات کے حوالے سے ملی اطلاعات اس امر کی غمازی کرتی ہیںکہ یہ ایک دہشت گردانہ کارروائی ہے اور نہتے شہریوں کو ہلاک کرنے کا بزدلانہ دہشت گردانہ حملہ ہے۔نیو یارک کے گورنر اینڈریو کوومو نے اسے یہ کہتے ہوئے ”تنہا بھیڑیے“ کا حملہ بتایا کہ ایسی کوئی شہادت نہیں ملی جس سے یہ نتیجہ اخذ کیا جا سکے کہ یہ کسی بڑے دہشت گردانہ حملہ کی ایک کڑی ہے۔
یہ واردات لوور مین ہٹن میں ورلڈ ٹریڈ سینٹر یادگار کے قریب انجام دی گئی۔بعد ازاں پولس نے ٹرک سے کود کر باہر اترنے والے ڈرائیو رکو گولی مار دی ۔لیکن اس کے دونوں ہاتھوں میں نقلی بندوقیں تھیں۔ عینی شاہدین کے مطابق اس ڈرائیورنے کرایہ کے ٹرک سے چھلانگ لگاتے ہوئے نعرہ تکبیر ”اللہ اکبر“ بلند کیا۔
پولس کے گولی اس کے پیٹ میں پیوست ہو گئی۔وہ شدید زخمی بتایا جاتا ہے لیکن اس کے بچ جانے کے امکانات ہیں۔اس حملہ آور کی شناخت 29سالہ سیف اللہ سیفو کے طور پرہوئی ہے۔ وہ ازبکستان کا رہائشی ہے۔

Title: eight dead in new york several injured asdriver careens down bike lane | In Category: دنیا  ( world )
Tags:

Leave a Reply