سابق بیوی سے ملنے کی خاطر ایک پروفیسر نے مصری ایر لائنز کا طیارہ ہائی جیک کر لیا

لرناکا(قبرص): مصری ایر لائنز کے جس طیارہ ایر بس اے320 کوجس میں81مسافر سوار تھے اسکندریہ سے قاہرہ جاتے ہوئے ہائی جیک کر کے قبرص لے جایا گیا تھا لرکانا بین الاقوامی ہوائی اڈے پر لینڈ کر گیا جہاں مذاکرات کاروں نے ہائی جیکر کو طیارے کے مسافروں کو رہا کرنے پر آمادہ کر لیا ۔
طیارے میں عملہ کے علاوہ81مسافر تھے۔لیکن ہائی جیکر نے عملہ اور 18 غیر ملکی مسافروں کو رہا نہیں کیا ۔ لیکن تھوڑی ہی دیر بعد اس نے عملہ کے اراکین کو بھی رہا کر دیا۔ ہائی جیکر قبرص میں پناہ دیے جانے کا مطالبہ کر رہا ہے۔ جہاں وہ اپنی سابق بیوی سے ملنا چاہتا ہے۔لرکانہ ہوائی اڈے سے دکھائی جارہی ویڈیو میں مسافروں کو طیارے سے اتر کر ایک بس میں بیٹھتے دکھایا جا رہا ہے۔
اسکندریہ ہوائی اڈے کے ایک اہلکار نے بتایا کہ جس وقت اس طیارے نے اسکندریہ سے پرواز بھری تو اس میں 8امریکی،4برطانوی،4ڈچ، دو بلجین ،ایک اطالوی اور30مصری تھے۔معلوم ہوا ہے کہ یہ ہائی جیکر جس نے یہ کہہ کر کہ اس نے دھماکہ خیز مواد سے بھری جیکٹ پہن رکھی ہے طیارے کو ہائی جیک کیا تھا،واحد ہائی جیکر تھا۔
دریں اثنا یورپی پارلیمنٹ کے صدر مارٹن شلز کے ساتھ میڈیا کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے قبرص کے صدرنیکوس انستاشیاڈیس نے اس ہائی جیکنگ کے پس پشت دہشت گردی کارفرما ہونا خارج ازامکان قرار دیا اور کہا کہ ایک ناکام عاشق نے اپنی سابق قبرصی بیوی سے پھر ناطہ جوڑنے کے لیے طیارے کو ہائی جیک کیا ہے ۔اس ہائی جیکر کا نام ابراہیم عبدالتواب سماع بتایاگیا ہے پیشہ سے وہ تدریسی فرائض انجام دینے والا ہے اور فی الحال اسکندریہ یونیورسٹی میں پروفیسر ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Egyptian plane hijacked in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply