مصری سلامتی دستوں کی کارروائی میں داعش کے14انتہا پسند ہلاک

قاہرہ: مصر نے کہا ہے کہ شمالی سینائی میں میں ایک پولس چوکی کو نشانہ بنا کر کیے گئے حملہ کے، جس میں8پولس اہلکار ہلاک ہو گئے، جواب میں کارروائی کرتے ہوئے سلامتی دستوں نے کارروائی کر کے دولت اسلامیہ فی العراق و الشام (داعش) کے 14انتہا پسندوں کو ہلاک کر دیا۔

داعش نے بدھ کے روز مصری شہر العریش پولس چوکی پرکیے گئے اس حملہ کی ذمہ داری قبول کی تھی۔مصری سلامتی دستوں کے افسران نے ابتدا میں کہا تھا کہ اس حملہ میں 10پولس اہلکار ہلاک ہوئے ہیں ۔لیکن ان ہلاکتوں کی تعداد کا ملان نہیںہو سکا۔

علاقہ میں میڈیا کےنمائندو کی رسائی نہیںہے۔وزارت داخلہ نے کہا کہ حملہ آوروں کی تلاش میں سلامتی دستوں نے شہر کے ایک لاوارث مکان کے اندر روپوش انتہاپسندوں کے ایک گروہ کا سراغ لگا لیا۔اور اس مکان کا محاصرہ کر کے انتہا پسندوں کو للکرا تو انہوں نے سلامتی دستوں پر فائرنگ شروع کر دی۔

لیکن سلامتی دستوںنے فوراً مکانات کی آڑ میںمورچہ سنبھال کر جوابی فائرنگ کی جس نے فائرنگ کے تبادلہ کی شکل اختیار کر لی۔اور14انتہا پسند مارے گئے۔

جائے تصادم سے خود کار رائفلیں، بم اور دھماکہ خیز بیلٹیں ملی ہیں۔مصر برسوں سے شمالی سینائی میں ، جہاں داعش سے وابستگی رکھنے والے انتہاپسند سرگرم ہیں،انتہاپسندوں سے نبرد آزما ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Egypt troops kill 14 militants day after daesh attack in sinai in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.