مصر میں نقاب پوش بندوق برداروں کا قبطی عیسائیوں کی بس پر فائرنگ،26ہلاک

قاہرہ :نامعلوم نقاب پوش بندوق برداروں کے ایک گروپ نے آج جنوبی مصر میں عبادت کےلئے ایک قدیم خانقاہ جارہے قبطی عیسائیوں پر اندھا دھند گولیاں برساکر 26 افراد کو ہلاک اور دیگر 26 کو زخمی کردیا۔ہلاک شدگان میں بچے بھی شامل ہیں۔عیسائی زائرین کا یہ گروپ دو بسوں اور ایک منی ٹرک میں منیا صوبہ میں سفر کررہا تھا جہاں عیسائیوں کی بڑی آبادی ہے۔
صوبائی گورنر عصام البداوی نے اس سے پہلے 23 افراد کے ہلاک اور 25 کے زخمی ہونے کی اطلاع دی تھی۔ موقع پر موجود لوگوں نے بتایا کہ قبطی عیسائیوں پر اس وقت حملہ کیا گیا جب وہ صوبہ کے مغربی حصہ میں واقع سینٹ سیموئل کی خانقاہ کی طرف جارہے تھے۔ انہوں نے بتایا کہ10 نقاب پوش حملہ آو ر، جو فوجی وردی میں تھے، عیسائی زائرین کی بس سڑک پر رکوا کربس میں گھس گئے اور اندھادھند فائرنگ شروع کر دی ۔
حالیہ مہینوں میں قبطی عیسائیوں پرمتعدد ہلاکت خیز حملے ہوئے ہیں اور دسمبر سے لیکر اب تک قاہرہ، اسکندریہ اور طنطا میں گرجا گھروں پر ہوئے بم حملوں میں تقریباً 70 عیسائی ہلاک ہوئے ہیں اور داعش نے ان حملوں کی ذمہ داری قبول کی ہے لیکن آج کی اس واردا کی کسی نے ابھی تک ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔

Title: egypt attack gunfire on bus carrying coptic christians kills at least 26 | In Category: دنیا  ( world )
Tags: , ,

Leave a Reply