ہالینڈ میں گستاخانہ خاکوں کا مقابلہ منسوخ

ایمسٹرڈم: ہالینڈ کے اسلام مخالف ممبر پارلیمنٹ گیرت وائلڈرز نے اعلان کیا ہے کہ اس نے گستاخانہ خاکوں کا مقابلہ کرانے کا منصوبہ ترک کر دیا ہے ۔ڈچ سیاستداں نے موت کی متعدد دھمکیاں ملنے کے بعد خوفزدہ ہو کر توہی آمیز خاکوں کا مقابلہ منعقد کرنے کا ارادہ منسوخ کیا ہے۔

واضح ہو کہ جب سے یہ خبر آئی تھی کہ ہالینڈ میں حضور ﷺ کی شان میں گستاخانہ خاکوں کا مقابلہ منعق د کرایاجارہا ہے عالم اسلام میں شدید ردعمل ظاہر کیا جارہا تھا اور پاکستان میں تسلسل سے مظاہرے ہو رہے تھے۔اور حکومت پر دباؤ ڈالا جارہا تھا کہ وہ ہالینڈ کے سفیر کو ملک بدر کر کے ہالینڈ سے سفارتی تعلقات منقطع کر لے۔

یہی نہیں بلکہ خود ہالینڈ کے اندر سیاست داں ، میڈیا اور عام شہری تک اس مقابلہ کو بے فیض و بے مصرف قرار دےتے ہوئے اسے بلا ضرورت ماسلمانوں کی دل آزاری قرار دے رہے تھے۔کیرت نے جون میں اعلان کیا تھا کہ وہ نومبر کے مہینے میں یہ مقابلہ کرائے گا۔اس نے یہ دعویٰ بھی کیا تھا کہ مقابلہ میں 200 افراد نے اپنی تخلیقات بھیج بھی دی ہیں۔

لیکن ہالینڈ کے وزیر اعظم مارک روٹے نے اس فیصلے سے خود کو دور رکھتے ہوئے کہاکہ اس مقابلہ کے پروگرام سے حکومت کا کوئی سروکار نہیں ہے یہ کسی ایک شخص کی ذاتی ذہنی اپج ہے۔انہوں نے کہا کہ وہ حق آزادی رائے کے حق میں ہیں لیکن ان کے خیال میں یہ مقابلہ توہین آمیز ہے اور اس کا مقصد صرف اور صرف دل آزاری ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Dutch anti islam lawmaker cancels blasphemous caricatures contest in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply