ٹرمپ کا طبی معائنہ وہی ڈاکٹرکرے گا جو براک اوبامہ کا کرتا تھا: وہائٹ ہاؤس

واشنگٹن: وائٹ ہاوس کے نائب پریس سیکرٹری ہوگن گڈلے نے کہاہے کہ امریکی صدر ٹرمپ کا سالانہ میڈیکل چیک اپ جمعے کو ہوگا۔ ان کا طبی معائنہ وہی ڈاکٹرکرے گا جو انکے پیشرو براک اوبامہ کا کرتا رہا ہے۔
طبی معائنے کے بعد عوامکو اس کے نتٰجہ سے آگاہ کر دیا جائے گا۔جسمانی معائنہ تقریباً دو گھنٹے تک چلے گا جس میں خون اور قارورے کے نمونے، دل کی دھڑکنوں کی بھی جانچ کی جائے گی۔ علاوہ ازیں ان کی نیند کی عادت اور جنسی زندگی کے حوالے سے بھی معلومات حاصل کی جائیںگی۔تاہم طبی معائنے میں دماغی معائنہ شامل نہیں۔
غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق گزشتہ روز وائٹ ہاوس میں امریکی اخبار سے گفتگو میں انہو ں نے کہا کہ میڈیا میں صدر ٹرمپ کے دماغی توازن ٹھیک نہ ہونے سے متعلق پروپیگنڈا کیا گیا جب کہ صدرذہین اور فوری فیصلہ ساز ہیں۔ٹرمپ کا طبی معائنہ والٹر ریڈ نیشنل ملٹری میڈیکل سینٹر میں جمعے کوہوگا۔
وائٹ ہاوس کے نائب پریس سیکریٹری ہوگن گڈلے کاکہنا تھا کہ میڈیا ٹرمپ کی ذہنی کیفیت کو منفی طور پر بڑھا چڑھا کے پیش کررہا ہے لیکن حقیقت میں ایسا نہیں ہے۔
انہوں نے کہا کہ ٹرمپ کی دماغی صحت کے بارے میں سوال اٹھانا ٹرمپ کے عہدے کی توہین کرنا ہے۔صدر ٹرمپ سیاست کے ساتھ ساتھ دیگر شعبوں میں بھی کافی مہارت رکھتے ہیں۔
ہوگن گڈلے نے ماہرین نفسیات پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ جو ڈاکٹرز صدر ٹرمپ کی ذہنی کیفیت سے آگاہ نہیں اور نہ کبھی ان سے ملے انہیں ایسے بیانات سے گریز کرنا چاہیں۔ایک صحافی مائیکل وولف نے اپنی ایک متنازعہ کتاب میں لکھا ہے کہ ٹرمپ اپنے پرانے دوستوںکونہیںپہچان پاتے اور بارہا کوئی بھی بات لفظ بلفظ دوہراتے ہیں۔

Title: donald trump to undergo medical check amid swirl of allegations over his health | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply