چین نے ڈوکلم کو پھر اپنا علاقہ بتایا،کڑاکے کی سردی میں بھی فوج تعینات رکھے گا

بیجنگ : ڈوکلم پر چین کے موقف میں کوئی لچک آتی نظر نہیں آرہی اور اس معاملہ میں اس کی نیت میں کھوٹ محسوس ہو رہا ہے ۔اگرچہ ڈوکلم میں شدید سرد موسم ہوتا ہے اور اس موسم میںہندوستان و چین دونوں ملکوں کے فوجیوں کو وہاں سے وپاس بلانے کی روایت رہی ہے اس کے باوجود چین نے یہ کہا ہے کہ وہ سردی کے دوران بھی ڈوکلم کے قریب اپنی فوج تعینات کیے رکھے گا۔
یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ ڈوکلم پرہندوستان اور چین کے درمیان 73روز تک تعطل رہا تھا۔یہاں تک کہ دونوں ملکوںکی فوجوں میں ٹکراؤ تک کی نوبت آگئی تھی۔ لیکن مذاکرات کے ذریعہ اگست کے مہینے میں یہ تعطل دور ہو گیا اور چین کی پیپلز لبریشن آرمی نے متنازعہ علاقہ میں سڑک کی تعمیر روک دی۔
لیکن جمعرات کے روز چینی وزارت دفاع کے ترجمان کرنل وو شیان نے کہا کہ ڈوکلم چین کا حصہ ہے۔انہوں نے ایک سوال کے جواب میں یہ بھی کہا کہ سردیوں میں بھی کڑاکے کی سردی کے باوجود وہاں فوج تعینات رکھے جانے کا بھی فیصلہ کیا جائے گا۔ کیونکہ ڈونگلانگ(ڈوکلم) چین کی سرزمینہے۔حالانکہ ہمیشہ سے یہ ہوتا رہا ہے کہ موسم سرما آتے ہی چین اور ہندوستان دونوں ہی ڈوکلم سے فوجیں ہٹا لیا کرتے تھے۔

Title: doklam is in our area says china | In Category: دنیا  ( world )
Tags: ,

Leave a Reply