داعش کے دہشت گردوں نے 15 عراقی فوجیوں کی سربریدہ لاشیں موصل شہر میں گھمائیں

موصل:عراق کے موصل شہر میں دولت اسلامیہ فی العراق والشام (داعش) کے دہشت گردوں نے بربریت کی ساری حدیں پار کرتے ہوئے سر عام 15 عراقی فوجیوں کے سر دھڑ سے الگ کر دئے اور اس کے بعد وہ فوجیوں کی لاشوں کو لے کر شہربھر میں گھومے۔ آرانیوز کے مطابق دہشت گردوں نے فوجیوں کو قتل کرنے کے بعد شورش زدہ شہر کے اہم راستوں سے ان کاجنازہ بھی نکالا۔
ننویہہ میڈیا سینٹر کے سربراہ رافت الجراری نے مقامی نیوز ویب سائٹ آرانیوز کو بتایا کہ دہشت گردوں کی اس حرکت کو سینکڑوں لوگوں نے دیکھا۔ جنوب مغربی شہر موصل میں گزشتہ ہفتے ہوئی جھڑپوں کے بعد دہشت گردوں نے فوجیوں کو قید کر لیا تھا۔
آرانیوز کے مطابق اس واقعہ کی پرواہ نہ کرتے ہوئے عراقی فوج مسلسل موصل کے مشرقی علاقوں کی طرف بڑھ رہی ہے۔ واضح رہے کہ جون 2014 میں داعش نے موصل پر قبضہ کر کے اسے اپنا دارالحکومت قرار دیا تھا جس کے بعد سے ہی اس علاقے میں لڑائی جاری ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Daesh publicly beheads 15 iraqi soldiers in mosul in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply