بنگلہ دیش کے ساحلی علاقے مورا طوفان کی زد میں، رہائشی پناہ لینے اسکولوں اور سرکاری عمارتوں میں منتقل

ڈھاکہ: ہلاکت خیزمورا طوفان نے بنگلہ دیش پر زبردست حملہ کر کے ملک کے جنوب مشرقی ساحلی علاقوں میں زبردسر بارشوں اور تیز و تند ہواؤں سے تباہی مچانا شروع کر دی۔منگل کی صبح سے ہی ماہی گیری بندرگاہ کاکس بازار اور چاٹگام شہر میں 117کلومیٹر فی گھنٹے کی رفتار کی ہواؤں کے ساتھ یہ طوفان نازل ہوا۔
اس طوفان کا خطرہ پہلے ہی ہو گیا تھا اوراس خطرے کو مدنظر رکھتے ہوئے طوفان کی آمد سے پہلے ہی حکومت کی جانب سے لوگوں کو ہدایت کرید گئی تھی کہ وہ ساحلی علاقوں کو خالی کر دیں۔بنگالی محکمہ موسمیات نے بھی اعلان کر دیا تھا مورا نامی ایک سمندری طوفان بنگلہ دیش میں منگل کے دن مشرقی ساحل سے ٹکڑائے گا۔
ضلع چاٹگاممیں طوفان کی تباہی سے بچنے کی خاطر لوگ سکولوں اور سرکاری عمارتوں میں پہنچ رہے ہیں۔ خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ چٹاگانگ، کاکس بازار اور دیگر ساحلی علاقے مورا طوفان کے دوران آنے والے سیلاب میں چار یا پانچ فٹ پانی میں ڈوب جائیں گے۔ طوفان کے پیش نظر ماہی گیروں اور کشتیوں کے مالکان کو بھی متنبہ کردیا گیا تھا کہ ساحلی علاقوں سے دور ہٹ جائیں۔
مورا طوفان سے ہندوستان اور میانمار کے بھی متاثر ہونے کا خدشہ ہے۔یاد رہے کہ سری لنکا میں ہونے والی حالیہ طوفانی بارشوں میں180 لوگ ہلاک ہوچکے ہیں۔ محکمہ موسمیات کے مطابق بنگلہ دیش میں ممکنہ طوفان کی وجہ سری لنکا میں ہونے والی بارشیں ہیں۔

Title: cyclone mora hits bangladesh with heavy wind and rain | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply