سعودی عرب میں جرائم کے گراف میں کمی واقع ہو رہی ہے: جنرل منصور

ریاض: سعودی وزارت داخلہ کے سیکورٹی ترجمان میجر جنرل منصور علی ترکی نے کہا ہے کہ 2015میں سعودی عرب میں جرائم کی وارداتوں میں زبردست کمی واقع ہوئی ہے۔
بدھ کے روز ریاض میں آفیسرز کلب میں ایک پریس کانفرنس میں انہوں نے کہا کہ سر راہ چلتے لوگوں پر حملوں کی وارداتوں میں گذشتہ سال کی نسبت 0.6فیصد کمی واقع ہو ئی۔انہوں نے کہا کہ 2015میں اس قسم کے جرائم کی شرح ہر ایک لاکھ افراد پر150افراد تک ہی رہی۔
انہوں نے کہا کہ اقدام قتل کی وارداتیں 9.8فیصد، فائرنگ کے6.8فیصد، خنجر زنی کے2.9فئیصد، خودکشی اور اقدام خود کشی کے2.6فیصد ،پہلے سے سوچھی سمجھی اسکیم کے تحت قتل میں0.7فیصد اور اغوا میں0.6فیصد کمی واقع ہوئی ہے۔
الترکی نے کہا کہ ان جرائم کو انجام دینے میں تارکین وطن اور طلبا کی اکثریت ہے جو باالترتیب 28اور18.8فیصد ہے۔ جبکہ ڈرائیوروں ،گھرہلو نوکروں اور بے روزگاروں کا نمبر ان کے بعد آتا ہے۔
اس قسم کے جرائم میں مکہ سر فہرست ہے جہاں جرائم کی شرح35.82فیصد اور دوسرے نمبر پر ریاض ہے جہاں جرائم کا فیصد19.75ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Crime rates decline in kingdom in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply