کولمبیا میں باغیوں نے حکومت کے ساتھ امن مذاکرات شروع کر دیے

بگوٹا:کولمبیا میں مارکسی نیشنل لبریشن آرمی(ای ایل این) باغیوں نے گزشتہ پانچ دہائی سے ملک میں جاری تشدد کو ختم کرنےکے لئے حکومت کے ساتھ سرکاری طور پر امن مذاکرات شروع کر دیے۔ کولمبیا میں گزشتہ 52برسوں سے جاری تشدد میں لاکھوں افراد ہلاک اور لاکھوں دیگر نقل مکانی کر چکے ہیں۔اس کے ساتھ ہی ملک کی معیشت بھی بری طرح متاثر ہوئی ہے۔ ملک کا دوسرا سب سے بڑا باغی گروپ ای ایل این گزشتہ سال کی طرح ایک دیگر باغی گروپ ریوولیوشنری آرمڈگروپ آف کولمبیا(ایف اے آر سی) کے نقش قدم چلتے ہوئے حکومت سے سمجھوتہ کرنا چاہتا ہے جس کے تحت باغی گروپوں کو تشدد کا راستہ چھوڑنے پر سیاست میں آنے کا موقع ملتا ہے۔ کویٹو کے باہر امن مذاکرات شروع ہونے پر ای ایل ثالث پابلو بیلٹران نے کہا کہخوش قسمتی سے ہم کولمبیا میں تشدد کا ایک سیاسی حل تلاش کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔
یہ امن مذاکرات ایف اے آر سی باغیوں سے کی گئی بات چیت کی طرح ہی ہوں گے،جس کے تحت سیاسی علیحدگی پسندی ،ترک اسلحہ اور متاثرین کے لئے معاوضے پر بات ہوگی۔تاہم اس بات چیت سے ایف اے آر سی باغی مکمل طورپر الگ رہیں گے۔ قابل ذکر ہے کہ ای ایل این باغی گروپ کو امریکہ اور یورپی یونین نے دہشت گرد تنظیم کی فہرست میں شامل کیا ہوا ہے۔اس گروپ نے لڑائی کےلئے رقم اور سرکار پر دباؤ بنانے کےلئے تاوان،وصولی،تیل اور بجلی کے شعبہ کے اداروں پر بمباری کی اور 52برسوں میں ہزاروں لوگوں کا اغوا کیا۔ ای ایل این کا قیام شدت پسند کیتھولک مذہبی مبلغین نے کیوبا کے1959 کے انقلاب سے تحریک لے کر کیا تھا اور یہ تنظیم حکومت کے ساتھ 2014 سے ہی بات چیت کرتا رہا ہے۔تاہم اس کے اب تک کوئی پختہ نتائج نہیں نکل سکے ہیں۔کولمبیا میں گزشتہ پانچ دہائی سے جاری تشدد کے واقعات میں دو لاکھ 20ہزار سے زیادہ لوگوں کی جانیں گئی ہیں۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Colombia begins peace talks with eln rebels to end 52 year war in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply