11/9حملوں میں سعودی عرب کا ہاتھ ہونے کا کوئی ثبوت نہیں: سی آئی اے سربراہ

نیو یارک:امریکہ کی سراغرساں ایجنسی سی آئی اے کے سربراہ جان برینن نے سعودی عرب کو کلین چٹ دیتے ہوئے کہا ہے کہ ایک بھی ایسا ثبوت نہیں مل سکا ہے جو اس امر کی نشاندہی کرتا ہو کہ 11ستمبر2001کو نیو یارک اور واشنگٹن پر جو دہشت گردانہ حملے ہوئے تھے اس میں سعودی عرب میں القاعدہ کی کوئی مدد کی ہے۔این بی سی نیوز شو ”میٹ دی پریس“میں انٹرویو دیتے ہوئے برینن نے کہا کہ یہ قیاس آرائیاں کہ ان حملوں میں سعودی عرب ملوث تھا اور جیسا کہ کانگریس نے الزام لگایا ہے بے بنیاد ہیں اور ان کی نہ تصدیق کی گئی، نہ جانچ کی گئی ۔
اوریہ الزام دور دور تک درست نظر نہیں آرہے۔سی آئی اے سربراہ 28صفحاتی اس رپورٹ کا ذکر کررہے تھے جو گذشتہ ہفتہ 11/9حملوں پر کانگریس پینلوں کی تحقیقات پر مشتمل ہے۔اس رپورٹ میں پوری توجہ سعودی  عرب اور ان حملوں میں مبینہ طور پر اس کے ملوث ہونے پر مرکوزتھی۔برینن نے کہا کہ کانگریس پینل کی رپورٹ میں صاف صاف کہا گیا ہے کہ دور دور تک ایسی کوئی شہادت نہیں مل سکی ہے جس سے ایک ادارے کے طور پر سعودی حکومت یا انفرادی سطح پر سعودی اہلکار وں نے القاعدہ کو کوئی مالی امداد بہم پہنچانا ثابت ہوتا ہو۔یہ 28صفحاتی رپورٹ تحقیقات میں حساس وسائل و ذرائع استعمال کیے جانے کے باعث عام نہیں کی گئی۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Cia chief says no evidence of saudi involvement in 911 attacks in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply