تینانمین اسکوائر کارروائی کے حوالے سے امریکہ کے بیان کی چین نے مذمت کی

بیجنگ: چین کی وزارت خارجہ نے امریکہ کے وزیر خارجہ ریکس ٹلرسن کے اس بیان کی مذمت کی ہے جس میں انہوں نے چین کو 1989 میں بیجنگ کے تینانمین اسکوائر پر جمہوریت حامی مظاہرین پر ہوئی کارروائی کی ذمہ داری قبول کرنے کہا تھا۔وزارت خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں مسٹر ٹلرسن کے بیان تعصبانہ قرار دیتے ہوئے اسے مکمل طور سے مسترد کر دیا۔چین کی کمیونسٹ پارٹی نے چار جون 1989 کو بیجنگ اسکوائر اور اس کے اردگرد مظاہرین کے احتجاج کو کچل دیا تھا۔
اگرچہ مظاہرہ کرنے والے طلباء اور دانشوروں پر فوجیوں کی اندھا دھند فائرنگ میں ہلاک ہونے والوں کی تعداد کبھی بھی جاری نہیں کی گئی تاہم انسانی حقوق گروپ اورعینی شاہدین کے مطابق مرنے والوں کی تعداد ہزاروں میں تھی۔اتوارکے روز واقعہ کی 28 ویں سالگرہ پر مسٹر ٹلرسن نے اس امریکی مطالبہ کااعادہ کیا جس میں اس واقعہ میں مارے گئے، حراست میں لئے گئے اور لاپتہ افراد کی مکمل تفصیلات پیش کرنے کا مطالبہ کیا گیا تھا۔مسٹر ٹلسن نے وزارت خارجہ کی ویب سائٹ پرجاری ایک بیان میں کہا “ہم نے چین پر زور دیا ہے کہ وہ اسمظاہرے کے دوران جیل میں بند قیدیوں کو ہراساں نہ کرے اور انہیں فوری طور پررہا کرے۔
چین کی وزارت خارجہ نے اپنی سرکاری خبر رساں ایجنسی ژنہو ا میں ایک بیان میں کہا کہ چین امریکہ کے اس مطالبے کی پرزور مخالفت کرتا ہے۔ ہم نے اس سلسلے میں اپنے طے کردہ موقف سے امریکہ کو پہلے ہی آگاہ کر دیا ہے۔ ہم امریکہ سے درخواست کرتے ہیں کہ وہ تعصب کی عینک اتارے ،غلطیوں میں اصلاح کرے اور چین۔امریکی تعلقات کی پائیدار ترقی کی حفاظت کے لیے اقدامات کرے ۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: China criticises u s prejudices over tiananmen anniversary in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply