یہ چین پاک اقتصادی نہیں دہشت گردانہ راہداری بنائی جا رہی ہے: بلوچ کارکن

نئی دہلی: بلوچ تحریک آزادی کے کارکن مزداک دلشاد بلوچ نے کہا ہے کہ چین پاک مقبوضہ کشمیر میں کوئی اقتصادی راہ داری نہیں بنا رہا بلکہ چین۔ پاکستان دہشت گردی راہداری بنارہا ہے نیز کہا کہ پاک حکومت چین کی مدد سے بلوچستان میں ”بڑے پیمانہ پر قتل عام“ کر رہی ہے۔ مزداک نے آر ایس ایس کے ترجمان آرگنائزر ویکلی کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ معاشی کو ریڈور درحقیقت دہشت گردانہ کو ریڈور ہے کیونکہ یہ دونوں ملک بلوچ لوگوں کو ہراساں کر رہے ہیں اور قتل کر رہے ہیں ان کے گاؤں جلا رہے ہیں۔
لوگوں کو ان کے گھروں سے نکال رہے ہیں ان کے وسائل لوٹ رہے ہیں۔ انہوں نے کہا ”یہ چینی ہر روز تقریباً 16 کلو سونا ، متعدد ٹرک تانبہ، لوہا، کوئلہ اور بہت کچھ کھود کر لے جاتے ہیں۔ .پاکستانی فوج کو دنیا کی سب سے بڑا دہشت گرد بتاتے ہوئے پلوچ کارکن نے کہا کہ تمام ممالک پاکستان کی فوجی اور مالی امداد بند کردیں کیونکہ اس کا استعمال دہشت گردانہ سرگرمیوں اور بلوچ افراد کے قتل عام کے لئے کیا جارہا ہے۔
پاک مقبوضہ کشمیر میں دہشت گردوں کے لانچ پیڈ وں کو تباہ کرنے کے لئے ہندوستان کے سرجیکل اسٹرائکس کی زبردست حمایت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہندوستان نے درست فیصلہ کیا ہے۔ مزداک نے کہا کہ کشمیر ہندستان کا اٹوٹ حصہ ہے۔پاکستان گلگت بلستان کے وسائل استعمال کر رہا ہے اور انہیں چین کو فروخت کر رہا ہے۔ ہم ہندوستان کے ساتھ کھڑے ہیں اور ہندوستان کو نہتے اور بے یارو مدد گار لوگوں کے دفاع کے لئے مزید اقدام کرنے چاہئیں۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: China building terrorist corridor in pok says baloch activist in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply