کناڈاٹرمپ کے فیصلہ سے پھنس جانے والے تارکین وطن کے عارضی قیام کا بندوبست کرے گا

اوٹاوا / ٹورنٹو: امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے ذریعہ مسلم اکثریتی سات بڑے ممالک کے مسافروں کے امریکہ میں داخلے پر روک لگائے جانے کے باعث کناڈانے اپنے یہاں پھنس جانے والے مسافروں کو عارضی رہائش گاہ مہیا کرنے کی پیشکش کی ہے۔ کناڈا کی حکومت کے ایک سینئر افسر نے بتایا کہ امریکہ کے اس فیصلے کی وجہ سے مسافروں کو کافی پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے جسے کے پیش نظر حکومت ایسے مسافروں کو عارضی قیام مہیا کرنے پر غور کر رہا ہے۔
اس سے پہلے کل امیگریشن کے وزیر احمد حسین نے کہا تھا کہ انہیں یہ نہیں معلوم کہ کتنے لوگ اس فیصلے سے متاثر ہو رہے ہیں لیکن کناڈا سے امریکہ جا رہے کچھ تارکین وطن کو طیارے میں چڑھنے سے روکا گیا۔ انہوں نے کہا کہ ایک وزیر کے طور پر میں آپ کو یقین دلاتا ہوں کہ جو لوگ کناڈامیں پھنسے ہوئے ہیں، انہیں ہم عارضی قیام مہیا کرائیں گے، جیسا کہ پہلے بھی کرتے رہے ہیں۔
کناڈاکی برآمدات کا 75 فیصد حصہ امریکہ میں جاتا ہے، شاید اسی وجہ سے کناڈا کی حکومت نے اب تک امریکہ کے اس فیصلہکی کھل کر مخالفت کرنے کے بجائے تارکین وطن کو اپنے ملک میں قیام کی سہولتیں بہم پہنچانے کا فیصلہ کیا ہے۔ تاہم کناڈامیں مقامی اور قومی رہنماؤں پہلے ہی مسٹر ٹرمپ کے اس فیصلے کی مذمتکر چکے ہیں۔ اپوزیشن نیو ڈیموکریٹ نے وفاقی پارلیمنٹ کا ایک ہنگامی اجلاس بلانے کا مطالبہ کیا ہے۔

Title: canada offers temporary home to those stranded by trump order | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply