بریگزٹ کے بعد برطانیہ اور دولت مشترکہ

سبھاش چوپڑا
لندن: یہاں حال ہی میں ڈیمو کریسی فورم کے زیر اہتمام ہونے والے ایک سمینار کے مقررین اس حوالے سے بہت زیادہ پر امید نظر نہیں آئے کہ بریکزٹ کے تحت یورپی یونین سے نکل جانے کے بعد دولت مشترکہ برطانیہ کے لیے متبادل منڈی کے طور پر ابھر سکتا ہے۔ خاص طور پرلارڈ میگ ناتھ ڈیسائی اس قسم کے اقدام کے لیے پہلے سے برطانیہ کے ذریعہ بھرپور تیاری اور پیش بندی نہ کیے جانے پر شدید تنقید کرتے نظر آئے۔
جان ایلیٹ نے ، جو برطانوی صحافی ا ور ہندوستان مقیم مصنف ہیں، ہندوستانیوں کے لیے برطانیہ کا ویزا اور ملازمت کے ضابطوں کو ہندوستان کے ساتھ تجارتی تعلقات میں سدھار کی راہ میں رکاوٹ بتایا۔تاہم ماہر اقتصادیات اور براڈ کاسٹر لنڈا یوہی چین ، جنوبی ایشیا اور دیگر خطوں میں عوام کی قوت تجارت اور بڑھتی آمدن کے باعث کافی پر امید نظر آئیں۔ڈیموکریسی فورم کے زیر اہتما م ہونے والے اس سمینار کی مکمل رپورٹ لندن سے شائع ہونے والے انگریزی ماہانہ جریدے ایشین افئیرز کے ماہ جون کے ایڈیشن میں شائع ہوئی ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Britain and commonwealth after brexit in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply