برازیلی سپریم کورٹ نے سابق برازیلی صدر اور سنیٹروں کے خلاف تحقیقات کا حکم دیا

ساؤ پالو: برازیل کی سپریم کورٹ نے ایک سرکاری تیل کمپنی کے خلاف تحقیقات میں رکاوٹ ڈالنے کے معاملے میں سابق صدر جوس سارنے اور دیگر لیڈروں کے خلاف تحقیقات کا حکم دیا۔ سرکاری جنرل پراسیکیوٹرروڈریگو جینٹ نے الزام لگایا ہے کہ سابق صدر جناب سارنے جو اس وقت کے رہنما ہیں، نے اپنے دور کے دوران دیگر ممبران پارلیمنٹ رومیرو زکااور رنان کالھروزکے ساتھ مل کر ایک تیل کمپنی کے خلاف تحقیقات میں رکاوٹ ڈالنے کی کوشش کی تھی۔
اس معاملے میں اس سرکاری تیل کمپنی کے سابق صدر سرگیو مکھادو کا بھی نام شہ سرخیوں میں رہا ہے۔ سپریم کورٹ کے جج ایڈسن فاچل نے دو فروری کو عہدہ سنبھالنے کے بعدان سرخیوں میں چھائے ’ارواس اسکینڈل‘کی پہلی تحقیقات کا حکم دیا ہے۔ جنرل پراسیکیوٹرنے سپریم کورٹ کے سامنے تیل کمپنی کے سابق سربراہ اور ان لیڈروں کے درمیان کوئی چھ گھنٹے کی بات چیت کی تفصیلات بھی دستیاب کرائی ہے جس میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ ان کا مقصد تحقیقات کے عمل میں خلل ڈالنے کاتھا۔
تاہم مکھادو اس وقت سرکاری گواہ بن چکا ہے اور اس نے ہی یہ ریکارڈنگ کی تھی جس میں اس بات کی مکمل تفصیل ہے کہ کس طرح مل کر وہ اس جانچ کے عمل کو روکنا چاہتے تھے تاکہ اس میں ملوث افراد کو بچایا جا سکے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Brazils supreme court probes former president senators in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply