ترکی میں کرد ورکرز پارٹی کے تازہ بم حملوں میں13ہلاک درجنوں میں زخمی

دیار باقر (ترکی):جنوب مشرقی ترکی کے دو شہروں میں ہوئے بم دھماکوں میں 9 غیر فوجی ہلاک اور درجنوں دیگر زخمی ہوگئے۔ سلامتی دستوں نے یہ اطلاع دیتے ہوئے اس کے لئے کرد ورکرز پارٹی(پی کے کے) کو مورد الزام ٹھہرایا ہے جو کچھ عرصہ سے پولس کو متواتر نشانہ بنائے ہوئے ہے۔
ایک پی کے کے کمانڈر نے اواخر ہفتہ کو تازہ حملوں کی دھمکی دیتے ہوئے کہا تھا کہ پولیس اب اس طرح چین سے نہیں رہ سکے گی جیسے ماضی میں رہتی تھی۔ کل جنگجوؤں نے عراق کی سرحد کی جانب سے راکٹ داغے اور طویل رینج والے ہتھیاروں سے گولے داغے جس میں چار فوجی ہلاک اور 9 زخمی ہوگئے۔ سلامتی دستوں نے شرناق صوبہ میں ہوئے حملہ کے لئے بھی پی کے کے کو ذ مہ دار ٹھہرایا۔
پی کے کے کے انتہا پسندوں نے شامی سرحد کے نزدیک مردین صوبہ میں ایک ہسپتال کے نزدیک سڑک کے کنارے نصب بم کو ریموٹ کنٹرول سے اڑاکر دھماکہ کر دیا جس میں چار راہگیر ہلاک اور 10پولس اہلکار سمیت40دیگر زخمی ہوگئے۔
یہ دھماکہ پولس اہلکاروںکو لے جانے والی ایک بس کو نشانہ بنایا گیا تھا۔تیسری واردات خطہ کے سب سے بڑے شہر دیار باقر میں کار بم دھماکہ کی شکل میں ہوئی جس 5 شہری ہلاک اور 12 دیگر زخمی ہوگئے جن میں 5 پولس افسر بھی شامل ہیں۔
واضح رہے کہپی کے کے کمانڈر کامل بایک نے ایک انٹرویو میں کہا کہ اب ایک نئے طرز کی جنگ شروع ہوچکی ہے اور یہ جنگ پہاڑوں، وادیوں اور شہروں کا فرق کئے بغیر ہرجگہ لڑی جائے گی۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Bomb attacks cross border fire kill 13 in southeast turkey in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply