اسامہ بن لادن جان بوجھ کر امریکہ کو سعودی عرب کا دشمن بنانا چاہتا تھا:رپورٹ

دوبئی: سعودی عرب، برطانیہ اور امریکہ کے افسروں کے مطابق دہشت گردی کے الزامات میں اپنے دور کا نہایت مطلوب شخص اوسامہ بن لادن مغرب اور مشرقی کے درمیان تعلقات انتہائی حد تک خراب کراکے منقطع کر دیے جانے پر مجبور کرنے کے لیے سعودی شہریوں کا استعمال کررہا تھا۔

برطانیہ کے ایک انتیلی جنس افسر نے روزنامہ گارجئین کو بتایا کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ اسامہ نے جان بوجھ کر ایک منصوبہ کے تحت 9/11حملوں کے لیے سعودیوں کا انتخاب کیا تھا۔

اس انٹیلی جنس افسر نے کہا کہ بن لادن کو اس بات کا یقین تھا کہ مغرب کو سعودی عرب کے خلاف کرنے میں اسے کامیابی مل رہی ہے۔1977تایکم ستمبر2001سعودی انٹیلی جنس کے سربراہ کے عہدے پر فائز رہنے والے شہزادہ ترکی الفیصل نے کہا کہ بن لادن 1990میں اس وقت سے افق سیاست پر نمودار ہوا تھا جب اس نے یمن سے جنوبی یمنی مارکسیوں اور کمیونسٹوں کا نکالنا چاہا تھا۔

یہ بات سوویت تسلط کے خلاف لڑنے کے لیے بن لادن کے افغانستان جانے کے بعد کی ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Bin laden deliberately wanted to tarnish saudi us relations western intelligence in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News
What do you think? Write Your Comment