بنگلا دیش میں ڈینگی بخار نے وبائی شکل اختیار کر لی،50ہلاک، ہزاروں بیمار،اسپتالوں میں جگہ نہ رہی

ڈھاکہ :بنگلا دیش میں ڈینگی نے تیزی سے پھیلتے ہوئے وبائی شکل اختیار کر لی۔گھنی آبادی والے اس ملک کے تمام اسپتال ڈینگی میں مبتلا مریضوں سے اٹے پڑے ہیں۔

مقامی میڈیا کے مطابق اس سال اب تک ڈینگی میں مبتلا ہو کر کم از کم50افراد ہلاک ہو چکے ہیں جبکہ 17ہزار افراد میں ڈینگی کے جراثیم پائے گئےہیں۔

وزارت صحت کے مطابق اس سال اس مرض میں ہلاک ہونے اورمبتلا ہوکر اسپتالوں میں داخل ہونے والوں کی تعدا د اتنی زیادہ ہے جس کے پیش نظر یہ کہا جارہا ہے کہ یہ سال گذشتہ انیس سال یعنی 2000 کے بعد سے اب تک کانہایت ہلاکت خیز سال بن گیا ہے۔

وزارت نے یہ بھی بتایا کہ گذشتہ 24گھنٹے کے دوران 1400افراد کو ڈینگی تشخیص کیا گیا ہے۔صحت عامہ کے اہلکاروں کا کہنا ہے کہ اس مرض سے سب سے زیادہ 2کروڑ کی آبادی والا قومی دارالخلافہ ڈھاکہ متاثر ہوا ہے جہاں تیز بخار،قے اور جوڑوں کے درد کی شکایت کے ساتھ اس مرض میں مبتلا لوگوں کی اتنی کثیر تعداد ہو گئی ہے کہ اس نے وبا کی صورت اختیار کر لی۔اور اسپتالوں میں جگہ نہیں رہی۔

وزیر صحت زاہد ملک نے کہا کہ حکومت نے مچھروں سے پھیلنے والے اس مرض پر قابو پانے کے لیے زبردست کوششیں کر رہی ہے اور مچھروں کے لاروے مارنے کی مہم چلائی جا رہی ہے۔

ڈھاکہ کے بعد چاٹو گرام ، فینی ، دیناج پور، میمن سنگھ ،کشور گنج، برہمن باریا، نرسنگڈی، نیلفا ماری،ٹنگل، بیریشال، جہنیادہ، کھلنا ،پبنا اور بوگورا شہر ڈینگی مرض سے بری طرح متاثر ہیں ۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Bangladesh struggles with worst outbreak of dengue in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.