عوامی لیگ کی ریلی پر حملہ کرنے کے معاملہ میں خالدہ ضیاءکے بیٹے کو عمر قید، 19کو موت کی سزا

ڈھاکہ: یہاں کی ایک خصوصی عدالت نے حزب اختلاف کی قائد اور سابق وزیر اعظم خالدہ ضیاءکے بیٹے کو2004میں عوامی لیگ کی ریلی پر حملہ کا، جس میں24افراد ہلاک اور حزب اختلاف کی اس وقت کی رہنما اور موجودہ وزیر اعظم شیخ حسینہ سمیت 500 دیگر زخمی ہو گئے تھے،مجرم قرار دیتے ہوئے عمر قید کی سزا اور 19دیگر کو سزائے موت سنادی۔

بیگم ضیا کے بھگوڑے بیٹے طارق رحمٰن دس سال پرانے اس کیس میں ملزم تھے۔ اس حملہ میں حسینہ زخمی ہوئی تھیں جبکہ عوامی لیگ کی ویمن سیل کی سربراہ اور سابق صدر ظل الرحمٰن کی اہلیہ آیوی رحمٰن ہلاک ہو گئی تھیں۔

عدالت نے 18ستمبر کو مقدمہ کی سماعت مکمل کر کے فیصلہ محفوظ رکھ لیا تھا جو آج سنایا گیا۔فیصلہ سنائے جانے سے پہلے حکومت نے پورے ڈھاکہ میں زبردست حفاظتی بندوبست کر دیا تھا اور دارلخلافہ میں امن و قانون برقرار رکھنے کے لیے سلامتی دستوں کے 4ہزار جون تعینات کر دیے گئے تھے۔

رحمٰن کو بھگوڑا قرار دے دیا گیا تھا اور اس کے غائبانہ میں سماعت ہو رہی تھی۔فی الحال رحمٰن لند ن میں مقیم ہ۔اور کہاجاتا ہے کہ اس نے وہاں سیاسی پناہ حاصل کر لی ہے۔لیکن برطانوی حکام نے اس کی امیگریشن حیثیت ظاہر نہیںکی ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Bangladesh ex pm khaleda zias son sentenced to life in 2004 grenade attack case in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News
What do you think? Write Your Comment