داعش سے تعلق رکھنے کے ملزم ماہن خان نے خود کو ایروزونا کی سازش سے لاتعلق بتایا

فیونکس: دولت اسلامیہ فی العراق و الشام (داعش) سے ہمدردی کے ملزم ایروزونا کے ایک لڑکے نے میری کوپا کاؤنٹی کی عدالت عالیہ میں سماعت کے دوران خود کو فیونکس علاقہ میں موٹر گاڑیوں کے دفتر پر بموں اور دیگر ہتھیاروں سے حملہ کی سازش معاملہ میں بے قصور بتایا ہے۔
اٹھارہ سالہ ماہن خان کو جولائی میں ایف بی آئی نے گرفتار کیا تھا اور پچھلے ہفتہ اس پر دہشت گردانہ حرکتوں کی سازش اور اسلحہ کے استعمال کا ارادہ کرنے کے الزام لگائے تھے۔
جرم ثابت ہونے پر اسے زیادہ سے زیادہ عمر قید کی سزا ہوسکتی ہے۔ خان کی طرف سے تینوں الزامات سے انکار کیا گیا تھا۔ ملزم کو بیڑیاں پہنا کر رکھا گیا ہے ۔استغاثہ کے مطابق یہ الزامات ایف بی آئی کی ایک تفتیش سے اخذ کیے گئے نتیجہ کے بعد عائد کیے گئے ہیں۔
کیونکہ خان نے ایک ایسے شخص سے بار بار بات کی تھی جو غالباً دولت اسلامیہ فی العراق و الشام (داعش) کا دہشت گردتھا۔ موٹر گاڑی ڈویزن کے آفس پر حملہ کے لئے رکھے گئے جو ہتھیار بر آمد ہوئے تھے ان میں پائپ بم اور پریشر کوکر بم شامل تھے۔(رائٹر)

Title: az terror suspect mahin khan enters not guilty plea at maricopa county superior court | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply