آسٹریلیا نے خیراتی فنڈ حماس کو منتقل کیے جانے کے باعث فلسطینی علاقوں کی مالی امداد بند کردی

سڈنی :آسٹریلیا نے کہا ہے کہ اس نےفلسطینی علاقوں کے لئے راحت گروپ “’ورلڈویژن پروگرام“ کے لئے پیسہ دینا بند کردیا ہے کیونکہ یہ الزامات لگائے گئے ہیں کہ غزہ میں خیراتی ادارے کے سربراہ کے سربراہ پر اسرائیل کا الزام ہے کہ اس نے لاکھوں ڈالر حماس کو منتقل کردیئے ہیں۔
اسرائیل کی خانگی سلامتی ایجنسی شاباک نے الزام لگایا کہ ورلڈ ویژن کی غزہ شاخ منیجر محمد الحلبی نے ،جنہیںکو 15 جون کو اسرائیل نے حماس کے کنٹرول والے خطہ میں داخل ہوتے وقت گرفتار کرلیا تھا،اپنی پوزیشن کا استعمال کرتے ہوئے انسانی بنیاد پر دیے جانے والے کروڑوں ڈالر کے فنڈ کو حماس کی دہشت گردانہ اور فوجی سرگرمیوں کے لیے حماس کو منتقل کر دیے تھے ۔
واضح رہے کہ حماس کو اسرائیل اور امریکہ نے دہشت گرد گروپ قرار دے کر بلیک لسٹ کررکھا ہے۔ ایک سینئر اسرائیلی سیکورٹی افسر نے کل کہا کہ 2010 سے گروپ کی جانب سے الحلبی کی مسلسل نگرانی کی جارہی تھی اور اس نے اعتراف کیا ہے کہ اس نے ایک سال میں 72 لاکھ ڈالر حماس کو دیئے تھے۔
ورلڈ ویژن کا کہنا ہے کہ اسے شاباک کے اس دعوے سے بہت حیرت ہوئی ہے ادھر حماس کے ایک ترجمان نے کہا ہے کہ گروپ کا الحلبی سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ آسٹریلیا کے خارجہ امور اور تجارت کے محکمہ نے ان الزامات کو انتہائی پریشان کن بتایا ہے اور کہا کہ وہ ”ورلڈ وژن“ اور اسرائیلی حکام سے فوری طور پر مزید معلومات مانگی ہے۔
انہوں نے کہا ”جب تک تفتیش مکمل نہیں ہوجاتی ہم فلسطینی علاقوں کے لئے ورلڈو ژن کے پروگراموں کے لئے کوئی پیسہ نہیں دیں گے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Australia suspends world visions palestine aid after allegations funds were diverted in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply