آسٹریلیا ہم جنس پرستی کے خلاف وعظ کرنے والے برطانوی مسلم عالم دین کا ویزا منسوخ کر سکتا ہے

سڈنی: آسٹریلیا نے اس برطانوی مسلم عالم دین مولانا فاروق سیکالیشفار کے ویزے پر نظر ثانی کرنے کا فیصلہ کیا ہے جن کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ انہوں نے فلوریڈا کے ہم جنس پرست نائٹ کلب پر ہلاکت خیز حملے سے قبل2016کے اوائل میں فلوریڈا کا دورہ کیا تھا اور 2013میں فلوریڈاکے سین فورڈ میں حسینی اسلامک سینٹر میں ایک وعظ کرتے ہوئے کہا تھا کہ ہم جنس پرستی کی سزا موت ہے۔
آسٹریلیائی وزیر اعظم میکم ٹرن بول نے منگل کے روز میڈیا کے نمئاندوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ آسٹریلیا ایسے افراد کو جو منافرت پھیلاتے ہیں اور آسٹریلیا آتے ہیں ہر گز برداشت نہیں کرے گا۔
اور ان کی حکومت اپنے قول پر عمل کرتے ہوئے فاروق سیکالیشفار کے ویزے پر نظر ثانی کر رہی ہے۔ مولانا فاروق سیکالیشفار ، جو کہ ایک شیعہ عالم دین ہیں اور ایران میں رہائش پذیر ہیں آج کل آسٹریلیا کے شہر سڈنی میں روحانیت کے موضوع پر ایک اسلامی سینٹر میں وعظ کی محفلیں کر رہے ہیں۔
سیکا لیشفار نے 2013میں مشی گن کے اسلامی سوسائٹی ہیڈ کوارٹر میں ہوئےیک وعظ میں کہا تھا کہ ان ہم جنس پرستوںکو جو بد فعلی میں مبتلا ہیں سزا ئے موت دے دینا چاہیے۔
تاہم ایسے کوئی شواہد نہیں ملے ہیں جن سے مولانا فاروق کے خیالات اور اورلینڈو ہلاکتوں کے ذمہ دار امریکی مسلم عمر متین کا درمیان کسی قسم کا تعلق ثابت ہو سکے۔سیکالیشفار نے رائٹر کو بتایا کہ وہ اورلینڈو خونریزی کی مذمت کرتے ہیں اور اسے ایسی وحشیانہ کارروائی سے تعبیر کرتے ہیں جسے کسی طور حق بجانب قرار نہیں دیا جا سکتا۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: australia reviews visa of muslim scholar who preached about death for homosexual acts in Urdu | In Category: دنیا  ( world ) Urdu News

Leave a Reply