ہندوستانی قونصل خانہ پر متواتر حملوں میں پاکستان کا ہاتھ ہونے کا شبہ: کرزئی

نئی دہلی: افغانستان کے سابق صدر حامد کرزئی نے کہا ہے کہ افغانستان کے صوبہ ننگر ہار میں واقع ہندوستانی قونصل خانے پر تسلسل سے ہونے والے حملوں میں پاکستان ملوث ہے۔
انہوں نے کہا کہ یہ حملہ پاکستان کے ذریعہ کرائے جانے والے اس قسم کے حملوں کی ہی ایک کڑی ہے۔ کرزئی نے ، جوفی الحال نئی دہلی میں رائے سینا مذاکرات میں شرکت کے لیے ہندوستان آئے ہوئے ہیں، کہا کہ پاکستان کو جب بھی موقع ملتا ہے وہ افغانستان میں ہندوستانی تنصیبات ،اداروں اور سفارتی مشنوں پر حملہ کرا دیتا ہے۔
کرزئی نے انگریزی روزنامہ ہندو کو اپنے خصوصی انٹرویو میں مزید کہا کہ پاکستان کا یہ حملے کرانے کا واحد مقصد ہند۔افغان تعلقات میں خرابی پیدا کرنا ہے۔ افغانستان میں دہشت گردی میں پاکستان کا ہاتھ ہو نے کوپاکستان اور افغانستان کے درمیان تعلقات میں کشیدگی کا واحد سبب بتاتے ہوئے کرزئی نے کہا کہ ہندوستان اور افغانستان کے درمیان بڑھتی قربت سے کسی کو اتنی زیادہ جلن اور حسد ہے کہ وہ افغانستان میں ہندوستانی قونصل خانوں پر یا افغانستان پر حملے کرائیں گے۔
کرزئی نے مزید کہا کہ ہر حملہ سرحد پار سے پڑوسی ملک پاکستان سے کرایا گیا ۔ اس قسم کی تخریب کاری کے لیے وہاں لشکر طیبہ، لشکر جھنگوی اور جیش محمد جیسی دہشت پسند تنظیمیں پنپ رہی ہیں۔وہاں ان کے مضبوط ٹھکانے اور محفوظ پناہ گاہیں ہیں، تربیتی میدان ہیں، بھرپور مالی وسائل ہیں اور انہیں تحریک دینے والے عناصر ہیں۔ اور یہ سب پاکستان کی سرزمین پر ہو رہا ہے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Attack on indian consulatekarzai hints at pakistan in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply