عراق میں عاشورہ کے جلوس میں بھگدڑ،31زائرین جاں بحق،100سے زائد مجروح

بغداد: عراق کی وزارت صحت کے مطابق عراق کے کربلا میں یوم عاشورہ پر ایک ماتمی جلوس کے دوران بھگدڑ مچ جانے سے کم از کم 31زائرین جاں بحق ہو گئے۔وزارت کے ترجمان سیف البدر کے مطابق منگل کو ہوئے اس سانحہ میں زخمی ہونے والے 100 سے زائدزائرین میں سے بیشتر کی حالت نازک ہے جس سے فوت ہونے والوں کی تعداد میں اضافہ کا اندیشہ ہے۔ یوم عاشورہ پر دنیا بھر سے زائرین کربلا میں جمع ہوتے ہیں اور پیغمبر حضور محمد ﷺ کے نواسے حضرت امام حسین کی شہادت کا دن نہایت عقیدت و احترام سے مناتے ہیں۔اس سے قبل کربلا، نجف ، بصریٰ اور قومی دارالخلافہ بغداد میں بھی زبردست حفاظتی بندوبست میں مجالس ہوئیں اور لاکھوں عزاداروںنے گلی کوچوں سے ماتمی جلوس نکالا ۔بیشتر سوگوار سینہ کوبی کر رہے تھے کچھ شہادت سے قبل امام حسین کی مدد کے لیے موجود نہ ہونے پر اظاہر تاسف و شرمندگی میں خود کو زنجیروں سے پیٹ پیٹ کر لہولہان کیے تھے۔منگل کے روز بھیہزاروں کی تعداد میں شیعہ زائرین سیاہ ماتمی لباس زیب تن کیے سیاہ پرچم ،جن پر جلی حروف میں لال رنگ سے ”حسین“ تحریر تھا،بلند کیے کربلا میںسنہری گنبد والے روضہ امام حسین کی جانب رواں دواں تھے کہ اچانک بھگدڑ مچ گئی۔ یہ حالیہ برسوں میں عاشورہ کے دوران ہونے والی مہلک ترین بھگدڑ ہے۔اس سے قبل2005میں بغداد میں امام کاظم کی جانب جارہے ایک زبردست جلوس میں خود کش بمبار کی موجودگی کی افواہ سے مچی بھگدڑ میںکم از کم965زائرین فوت ہو گئے تھے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: At least 31 pilgrims dead in karbala stampede on ashura in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.