مغادیشو میں سڑک کنارے نصب بم دھماکہ میں 18بس مسافر ہلاک

مغادیشو:صومالیہ کے دارالحکومت مغادیشو کے جنوب مغرب میں واقع لافول شہر میں جمعرات کی صبح اس وقت کم از کم18افراد ہلاک ہوگئے جب ایک منی بس جس میں وہ سفر کر رہے تھے، سڑک کنارے نصب بم دھماکے کی زد میں آگئی۔
پولیس کے مطابق دھماکے سے منی بس میں آگ لگ گئی جس سے اس میں سوار تمام 18 مسافروں زندہ جل گئے۔ جائے حادثہ پر موجود ایک پولیس افسر عابدقادر محمد نے کہا کہ ایک ریموٹ کنٹرول کے ذریعے بم دھماکہ کیا گیا۔
ایک گاڑی کے ڈرائیور نور احمد نے، جو اسی میں سفر کر رہا تھا، کہا کہ منی بس کے آگے سیکورٹی دستہ کی ایک گاڑی چل رہی تھی جو ایک ٹرک میں سوار سکیورٹی اہلکار وں کی رہنمائی کر رہی تھی۔ اس نے کہا کہ شاید اس سرکاری گاڑی کو ہی جس میں فوجی جارہے ،تھے نشانہ بنایا گیاہوگا۔
احمد نے کہا کہ فلک شگاف دھماکہ کی آواز سننے سے پہلے فوجیوں سے بھری ایک گاڑی اور پھر اس کے بعد منی بس اس کی گاڑی کوا وور ٹیک کر گئی۔ لیکن جس سرکاری گاڑی کو نشانہ بنایا جانا تھا وہ صاف بچ نکلی ۔
اور اسے کوئی نقصان نہیں پہنچا۔فی الحال کسی بھی تنظیم نے حملے کی فوری ذمہ داری نہیں لی ہے۔لیکن الشباب کے انتہا پسند مغرب حمایت یافتہ حکومت کو گرانے کے لیے عام طور پر ملک میں سیکورٹی فورسوں اور شہریوں پرا س قسم کے حملے کرتے رہے ہیں اس لیے شک کی سوئی انہی کی طرف جاتی ہے۔(رائٹر)

Title: at least 18 killed by a roadside bomb in mogadishu in Urdu | In Category: دنیا  ( world ) Urdu News

Leave a Reply