آسٹریلیا میں پاپوا گنی کے ہزاروں قیدی کروڑوں ڈالر معاوضہ کا مقدمہ جیت گئے

سڈنی:آسٹریلیا کے شہر پاپوا گنی میں ایک دور افتادہ جیل میں بند تقریباً2ہزار قیدیوں کو ، جنہوں نے اپنے اوپر ظلم و ستم اور جسمانی و نفسیاتی طور پر زخم دینے کا الزام لگاتے ہوئے مقدمہ دائر کیا تھا، کروڑوں ڈالر معاوضہ کے مستحق قرار دیے گئے ہیں۔ ماہرین کا کہناہے کہ آسٹریلیا کی تاریخ میں انسانی حقوق کا یہ تاریخی فیصلہ ہے۔تفصیلات کے مطابق آسٹریلیا میں قید اسیروں نے اپنے اوپر ہونے والے ظلم کے خلاف احتجاجاً اپنے ہونٹ سی لیے تھے تاکہ ان کی آواز سنی جا سکے۔ جس کے بعد انکی آواز سنی گئے اور عدالت نے حکومت کو حکم دیا ہے کہ وہ جزیرہ مینس میں بند قیدیوں میں 5 کروڑ 30 لاکھ امریکی ڈالر کی رقم تقسیم کرے۔
عدالت کے اس فیصلے کے باعث قیدیوں کو اذیتوں سے نجات ملی ہے۔ ایک قانونی فرم نے کہا ہے کہ یہ ایک بہترین فیصلہ ہے کہ جس میں خود مدعی بھی پیسے اد اکرنے کے لیے آمادہ ہے۔ اس سے پہلے بھی عدالت نے فیصلہ سنایا تھا کہ جزیرہ مینس میں قیدیوں کو رکھنا غیر قانونی فعل ہے۔ایمنسٹی انٹرنیشنل نے بھی اس فیصلے کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ اس فیصلے سے آسٹریلوی حکومت پر ایک کاری ضرب لگی ہے۔ذرائع نے بتایا کہ یہ رقم اس جیل کے تمام سابق اور موجودہ قیدیوں میں ان کی مدت سزا کے مطابق تقسیم کی جائے گی۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Asylum seekers win 53m settlement from australian government in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply