دہشت گرد تنظیم بوکو حرام کے بچہ خود کش بمباروں کی تعداد میںزبردست اضافہ

ابوجا:قوام متحدہ اطفال فنڈ (یونیسیف) کی ایک رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ دہشت گرد تنظیم بوکو حرام نے چار افریقی ملکوں چاڈ،کیمرون، نائجر اور نائجیریا کے رہائشیوں کو پانی بہم پہنچانے کا سب سے بڑا ذریعہ جھیل چاڈ خطہ میں بچوںخاص طور پر لڑکیوں کو بچہ خود کش بمبار کے طور پر بہت زیادہ استعمال کرنا شروع کر دیا ہے اور اس میں بتدریج اضافہ ہو رہا ہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ دہشت گرد تنظیم بوکو حرام نے سال 2017 میں بچہ خود کش حملہ آوروں کی تعداد میں اضافہ کیا ہے۔
یونیسیف کی ایک رپورٹ اور بیان میں کہا گیا ہے کہ بوکو حرام نائجیریا، نائیجر، کیمرون اور چاڈ میں سرگرم ہے۔ اس نے اس سال کے ابتدائی تین ماہ میں 27 بچوں کو خود کش بمبارکے طور پر استعمال کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ سال بھی ابتدائی تین ماہ میں نو بچوں کو خود کش بم حملہ آور کے طور پر استعمال کیا گیا جبکہ سال 2016 میں 30 بچوں کا استعمال کیا گیا جن میں زیادہ تر لڑکیاں شامل ہیں۔ یونیسیف نے کہا کہ بوکو حرام گزشتہ آٹھ سال سے دہشت گرد سرگرمیوں کو انجام دے رہا ہے جس میں کم سے کم 20 ہزار لوگ مارے گئے ہیں۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Alarming rise in boko haram child suicide bombers in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply