حالیہ سفارتی بحران کی وجہ ایران یا الجزیرہ نہیں ہے: قطری وزیر خارجہ

پیرس:قطر کے وزیر خارجہ کا کہنا ہے کہ حالیہ سفارتی بحران کی جڑ کا اگرچہ ابھی تک علم نہیں ہو سکا ہے لیکنیہ بات اپنی جگہ مسلمہ ہے کہ ایران اور الجزیر ہ بہر حال اسے ذمہ دار نہیں ہیں ۔پیرس میں ہونے والی ایک پریس کانفرنس کے دوران قطر کے وزیر خارجہ شیخ محمد بن عبدالرحمان الثانی کا کہنا تھا کہ سفارتی بحران کی اصل وجوہات کا علم نہیں ہے مگر اتنا معلوم ہے کہ بحران کی وجہ ایران اور الجزیرہ نہیں ہیں۔
اس کے علاوہ ان کا کہنا تھا کہ قطر تمام فریقین سے مذاکرات کرنے کیلئے آمادہ ہے۔ مگر قطر کسی بھی صورت میں غیر ملکی شرطوں ک قبول نہیں کرے گا۔قطر کے وزیر خارجہ کا مزید کہنا تھا کہ جو باتیں خارجہ امور سے تعلق رکھتی ہیں۔ ان کے بارے میں کسی کو بات کرنے کا حق کا حاصل نہیں ہے اور قطر پر لگائے گئے الزامات پر واضح بنیادی اصولوں کے مطابق گفتگو ہونی چاہیئے۔وزیر خارجہ شیخ محمد بن عبدالرحمان الثانی نے پریس کانفریس کے دوران مزید کہا کہ الجزیرہ قطر کا اندرونی معاملہ ہے۔
قطر پر پابندیاں لگانے والے ممالک سے مذاکرات کے دوران اس معاملے پر بات چیت نہیں کی جائے گی۔دوسری جانب سعودی عرب، متحدہ عرب امارات اور بحرین کی جانب سے بیان میں کہا گیا ہے کہ قطر پر فضائی پابندیاں صرف ان ایئر لائنز کمپنیوں پر ہیں جو قطر کی ہیں یا وہاں رجسٹر ہوئی ہیں۔اس کے علاوہ مراکش کی جانب سے قطری عوام کیلئے غذائی اشیا سے بھرا ایک جہاز قطر کی طرف روانہ کردیا گیا۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Al jazeera off the table in any gulf crisis talks fm in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply