ننگر ہار میں جھڑپ کے دوران کالعدم جماعت الاحرار کا منحرف کمانڈرساتھی سمیت ہلاک

کابل: ( ایجنسی)کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے سابق امیر حکیم اللہ اور بیت اللہ محسود کے قریبی ساتھی اور کالعدم جماعت الاحرار سے منحرف حزب الاحرار کا کمانڈر جہاد یار محسود، ساتھی کمانڈر سمیت افغان صوبہ ننگر ہار میں جھڑپ کے دوران ہلاک ہوگیا۔
واضح رہے کہ عمر خالد خراسانی کے گروپ کالعدم جماعت الاحرار کے منحرف کمانڈر جہاد یار نے چند روز قبل ہی عمر خراسانی کے گروپ حزب الاحرار میں شمولیت اختیار کی تھی۔ ذرائع کے مطابق افغان صوبہ ننگرہار کے علاقے گوشتہ خوگہ خیل میں جماعت الاحرار اور حزب الاحرار کے درمیان جھڑپ میں کمانڈر جہاد یار محسود اور علیم خان عرف عمر کمال مارے گئے۔
جھڑپ میں کالعدم جماعت الاحرار کے سربراہ عمر خالد خراسانی کے اہم کمانڈر احمد مومند زخمی بھی ہوئے۔ مقتول کمانڈر جہاد یار کالعدم تحریک طالبان کے سابق امیر حکیم اللہ اور بیت اللہ محسود کا قریبی ساتھی اور چند روز پہلے حزب الاحرار دھڑے میں شمولیت سے قبل کالعدم جماعت الاحرار کا اہم عسکری کمانڈر تھا۔دوسری جانب عمر کمال کالعدم جماعت الاحرار کا سابق کمانڈر اور باجوڑ کے علاقے نواگئی کا رہائشی تھا۔

Title: al ahrar commander killed | In Category: دنیا  ( world )

Leave a Reply