عراق اور شام میں امریکی طیاروں کی بمباری کی زد میں آکر 14 شہری بھی ہلاک ہوگئے:امریکی فوج کا اعتراف

واشنگٹن: امریکی فوج کے مطابق گزشتہ 28 جولائی سے اس سال 29 اپریل تک عراق اور شام میں دہشت گرد تنظیم دولت اسلامیہ فی العراق و الشام (داعش) اور القاعدہ کے ٹھکانوں کو نشانہ بنا کرکی گئی امریکی بمبار طیاروں کی گولہ باری سے غیر ارادی طور پر 14 شہری ہلاک اور کم و بیش اتنے ہی زخمی ہوئے ہیں۔
مشرق وسطیٰ میں امریکی فوجی مہم کے امریکی مرکزی کمانڈ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ’ہمارے فضائی حملوں میں انجانے میں مارے گئے اور زخمی ہوئے عراق اور شام کے شہریوں کے تئیں ہمیں گہرا افسوس ہے‘۔ فوج نے کہاکہ ہم نے شام میں القاعدہ سے تعلق رکھنے والے خراسان گروپ اور آئی ایس کے علاقوں اور گاڑیوں کو ہی نشانہ بنا کر پر فضائی حملے کئے ہیں۔
جمعرات کو جاریکی گئی امریکی فوج کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ 3شہری 28جولائی2015کو اس وقت ہلاک ہوئے جب ان کی گاڑی اچانک اس وقت نمودار ہوئی جب امریکی جنگی طیارہ اپنا کام کرچکا تھا۔ ایک اور کیس 29 اپریل کو ہوا جس میں موصل میں داعش کے ایک دہشت گرد نیل پرکاش کو نشانہ بنا کر حملہ کیا گیا جس کی زد میں سڑک سے گذر رہے تین شہری اور ایک نزدیکی کمپاؤنڈ میں موجود شہری آکر ہلاک ہو گئے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Air strikes killed 14 civilians in iraq syria u s military in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News

Leave a Reply