طالبان کے زیر تسلط علاقہ میں افغان طیارہ تباہ،83مسافروں کی ہلاکت کا خدشہ

کابل: افغانستان میں طالبان کے زیر تسلط علاقہ میں ایک فغان طیارہ فضا میں ہی تباہ ہو کر آگ کے گولے میں تبدیل ہو گیا۔

تاہم اس کا علم نہیں ہو سکا ہے کہ اس حادثہ میں کتنے افراد ہلاک ہوئے۔لیکن بتایا جاتا ہے کہ طیارے میں عملہ سمیت 80افراد تھے۔

مقامی اہلکاروں نے بتایا کہ آریانہ افغان ایرلائنز کا بوئنگ 737-400مشرقی غزنی صوبہ کے دور افتادہ پہاڑی خطہ دیہہ یاک ڈسٹرکٹ میں تباہ ہو کر گر گیا۔

لیکن سرکاری ایر لائنز نے کہا کہ اس کے کسی طیارہ کو حادثہ پیش نہیں آیا اور دو شنبہ کوا س کی تمام پروازیں معمول کے مطابق رہیں تاہم وہ اپنے بیڑے میں شامل طیاروں کی گنتی کر رہی ہے۔

طیارے مے مسافروں اور عملہ کا کیا حشر ہوا اس کا کوئی علم نہیں ہو سکا ہے۔ علاوہ ازیں اس بارے میں بھی متضد رپورٹیں ہیں کہ اس طیارہ نے کس شہر سے پرواز بھری اور کہاں جارہا تھا۔

لیکن اتنا ضرور معلوم ہوا ہے کہ طیارہ گھریلو پرواز پر تھا۔ مقامی ابلاغی ذرائع نے بتایا کہ اس طیارے میں 83افراد سوار تھے اور مقامی وقت کے مطابق دوپہر سوادو بجے طیارہ کابل کے جنوب مغرب میں تباہ ہو کر گر گیا۔

غزنی صوبے کے ترجمان عزیز اللہ عظیمی نے اس کی تصدیق کر دی کہ آریانہ ایر بس دیہہ یاک ڈسٹرکٹ میں گرکر تباہ ہو گیا۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Afghanistan 83 feared dead as plane crashes in taliban held ghazni province in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.