افغانستان میں سات خود کش بمبار وں کی گرفتار ی سے ایک بڑا دہشت گردانہ حملہ ناکام

کابل: افغان سلامتی دستوں نے قومی دارالخلافہ کابل میں وزارت داخلہ کے دفاتر اور ایک سرکاری اسپتال پر دہشت گردانہ حملے کرنے کا منصوبہ بناتے سات مشتبہ انتہاپسندوں کو گرفتار کر لیا۔یہ گرفتاریاں کابل میں ان دو بم دھماکوں کے ،جس میں9صحافیوں سمیت 26افراد ہلاک ہو گئے تھے، دو روز بعد عمل میں آئی ہیں۔جمعرات کو نیشنل ڈائریکٹوریٹ آف سیکورٹی کے اہلکاروں نے کہا کہ ان ساتوں مشتبہ انتہا پسندوں سے تحقیقات ہوئی اور انہوں نے اس کا اعترا ف کیا کہ وہ وزارت داخلہ کی پرانی عمارت اور افغان سلامتی دسروں کو طبی امداد بہم پہنچانے والے غازی احمد اللہ خان اسپتال پر حملہ کرنے کا منصوبہ بنا رہے تھے۔ان سبھی کو حملے کرنے کے لیے سازو سامان سے آراستہ کر کے اور خود کش بمبار بنا کر ایک سہولت کار کے توسط سے کابل بھیجا گیا تھا ۔ان ساتوں نوجوانوں کو افغان۔پاک سرحد پر واقع چمن شہر کے مختلف مدارس میں تربیت دی گئی تھی۔واضح ہو کہ حالیہ مہینوں میں کابل میں تسلسل سے ہونے والے دہشت گردانہ حملوں میں سیکڑوںافراد ہلاک و زخمی ہو چکے ہیں۔جس سے ان کارروائیوں کے خلاف پیشگی اقدامات کرنے یا ان حملوں کو روکنے میں سیکورٹی افسران اور حکومت کی نااہلی بے نقاب ہوجاتی ہے۔گذشتہ ماہ طالبان نے موسم بہار میںاپنی سالانہ انتہاپسندانہ کارروائیاں یا موسم جنگ شروع کرنے کا اعلان کیاتھا۔ اور کہا تھا کہ وہ افغانستان میں امریکی فوجوں کو نشانہ بنائیں گے۔

Read all Latest world news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from world and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Afghan forces say foil attacks on government building hospital in Urdu | In Category: دنیا World Urdu News
Tags:

Leave a Reply