یہ مادہ گوریلاجو آج مر گئی اشاروں کی زبان میں کیسے بات کرتی تھی ویڈیو دیکھیں

کیلفورنیا: کوکو نام کی وہ مادہ گوریلا جسے اشاروں کی زبان پر قابل دید عبور حاصل تھا آج صبح مرگئی۔ وہ46سال کا تھا۔ اس کے مرنے کی خبر سے اس سے انسیت رکھنے والوں میں غم کی لہر دوڑ گئی۔

جو لوگ کوکو سے واقف تھے اور اس سے ایک بار بھی ملے ہیںتو انہوںنے کوکو کے ستھ گذرے اپنے یادگار لمحات کا سوشل میڈیا پر خوب ذکر کیا۔اکثر لوگوں نے اپنے دکھ و صدمہ کا اظہا رکر کے لیے انٹرنیٹ کا سہارا لیا۔جس وقت یہ مادہ گوریلا زندیہ تھی تو اس کے اشاروں کی زبان پر عبور حاصل ہونا اس کی عکاسی کرتا تھا کہ گوریلا سب کچھ کر سکتا ہے۔

اس کی سائن لینگویج ٹیچر ڈاکٹر فرنسائن پینی پیٹرسن نے1972سے کوکو کو اشاروں کی زبان میں بات کرنا سکھانا شروع کیا تھا۔گوریلا فاؤنڈیشن کے مطابق46سالہ ویسٹرن لو لینڈ گوریلا کیلیفورنیا کے شانت کروز پہاڑیوں میں واقع فاؤنڈیشن کی پناہ گاہ میں نیند میں ہی مر گئی۔

مادہ گوریلا 1971میں سان فرانسسکو چڑیا گھر میں تولد ہوئی تھی۔یہ اشاروں کی زبان میں نہ صرف بات کرتی تھی بلکہ چھیڑ چھاڑ بھی کیا کرتی تھی۔

Title: koko the gorilla who could chat poke fun using sign language dies at 46 in Urdu | In Category: وائرل خبریں  ( viral-stories ) Urdu News

Leave a Reply