کھیلوں کا آسکر ایوارڈ بولٹ اور سمون نے جیتا

موناکو:دنیا کے سب سے تیز دوڑنے والے اوسین بولٹ نے کرسٹیانو رونالڈو اور لیبرون جیمز جیسے مایہ ناز کھلاڑیوں کو پیچھے چھوڑتے ہوئے بہترین کھلاڑی کا’ لاریوس عالمی ایوارڈ‘ چوتھی بار اپنے نام کیا جبکہ خواتین کے زمرے میں جمناسٹ سمون بالس اس ایوارڈ کی فاتح بنیں۔ موناکو میں منعقد ہوئے لاریوس عالمی ایوارڈ تقریب نے جمیکاکے رنر اور مسلسل تین بار کے اولمپک چیمپئن بولٹ نے ریکارڈ چوتھی بار سال کے بہترین کھلاڑی کا ایوارڈ اپنے نام کیا۔
جہاں ایک طرف بولٹ 1.95 میٹر لمبے ہیں تو وہیں امریکی جمناسٹ لمبائی میں محض 1.45 میٹر ہیں۔لیکن دونوں کھلاڑیوں نے ریو اولمپکس میں اپنی شاندار کارکردگی سے طلائی تمغے جیتے۔ بولٹ نے سال 2009، 2010 اور 2013 میں بھی لاریوس ایوارڈ جیتے تھے. اس سے پہلے سوئٹزرلینڈ کے راجر فیڈرر اور امریکی ٹینس کھلاڑی سرینا ولیمز اور سرفر کے کیلی سلیٹر نے کھیلوں کے آسکر کہے جانے والے لاریوس ایوارڈ چار چار بار جیتے۔ بولٹ کو عظیم کھلاڑی مائیکل جانسن نے نوازا اور ساتھ ہی دوسروں کے ریکارڈ نہیں توڑنے کا بھی مشورہ دیا۔ بولٹ نے پھر مذاق میں کہا کہمجھے معاف کیجئے میں نے اپنا ریکارڈ توڑ دیاہے۔
انہوں نے کہا کہ مجھے اس اعزاز کے لیے شکریہ ۔ لاریوس میرے لئے دنیا کا سب سے بڑا اعزاز ہے۔ یہ میرا چوتھا ایوارڈ ہے اور میں نے اس معاملے میں فیڈرر جیسے عظیم کھلاڑی کی برابری کر لی ہے۔میں اب اچھے لوگوں کے زمرے میں شامل ہوں۔ یہ میرے لیے بہت خاص ہے۔

Title: usain bolt wins laureus sportsman of the year award | In Category: کھیل  ( sports )

Leave a Reply