سنسنی خیز میچ میں سری لنکا کو دو وکٹ سے ہرا کر بنگلہ دیش ٹرائینگولر سریز کے فائنل میں داخل

کولمبو: بنگلہ دیش پریم داسا کرکٹ اسٹیڈیم میں میزبان سری لنکا کو سنسنی خیز میچ میں 2وکٹ سے ہرا کر ٹرائینگولر سریز کے فائنل میں پہنچ گیا جہاں اتوار کے روزا س کا مقابلہ ہندوستان سے ہوگا۔160رنز ہدف کے تعاقب میں بنگلہ دیش نے آخری اوور کی پانچویں گیند پر چھکا لگا کر منزل پار کر لی۔لیکن یہ آخری اوور ایسا ہے جسے دونوں ٹیمیں بھول جانا چاہیں گی۔ کیونکہ وہ وہ اوور ہے جو جیت، تنازعات سے بھرا اور کھیل جذبے سے عاری ہے۔159رنز کے تعاقب میں 13ویں اوور تک محض2وکٹ کے نقصان پر 97نز بنا کر بنگلہ دیش میچ کو یکطرفہ بنانے کی جانب رواں دواں تھی کہ اچانک ہی اس کی اننگز موسم خزاں سے دو چار ہو گئی اور پت جھڑ کے سوکھے پتوں کی طرح اس کی وکٹیں گرنا شروع ہو گئیں۔اور اگلی 34بالوں پرمحض40رنز کے عوض اس کے مزید 4کھلاڑی آو¿ٹ ہو گئے۔اور ابھی بنگلہ دیش منل سے12رنز دور تھا کہ 19.ویں اوور کی دوسری گیند پرمستفیض الرحمٰن کی شکل میں اس کا8واں وکٹ گر گیا۔
اب صرف 6گیندیں اور دو وکٹ بچی تھیں ۔ اور12رنز دکار تھے۔ کپتان تشارا پریرا نے بائیں ہاتھ کے فاسٹ بولر ایسورو اوڈانا ۔ کو گیند تھمائی ۔اوڈانا کی پہلی گیند پر جو باو¿نسر تھا،’کاٹ بہائنڈ ‘کی پیل کی گئی لیکن امپائر ٹس سے مس سے نہ ہوئے ۔ریویو بھی بیکار گیا کیونکہ گیند بیٹ کو چومے بغیر ہی کیپر کے ہاتھوں میں پہنچی تھی۔ لیکن اگلی ہی گیند پر مستفیض نے محمود اللہ کوا سٹرائیک دینا چاہا اور اوور کے لگاتار دوسرے باو¿نسرکو پل کرنا چاہا لیکن گیند بلے پر نہ آسکی تاہم مستفیض دوڑ پڑے مگر نان اسٹرائیکنگ اینڈ پر رن آو¿ٹ قرار دیے گئے۔ بنگلہ دیشی کھلاڑیوں نے احتجا ج کیا کیونکہ لیگ امپائر نے اسے نوبال قرار دیا تھا لیکن ساتھی امپائر سے مشاورت کے بعد فیصلہ واپس لے لیا اور مستفیض رن آو¿ٹ قرار دیے گئے ۔
اب تین گیندیں باقی بچی تھیں ۔8رنز کی ضرور تھی۔ تیسری گیند آف اسٹمپ سے اتنی دور تھی کہ اگر محمود اللہ اسے چھوڑ دیتے تو وائڈ ہو جاتی لیکن محمود نے کور میں گنجائش دیکھ کر کور کے اوپر سے ایسا زناٹے دا ر شاٹ مارا کہ گیند گولی کی مانند کور باو¿نڈری پار کر گئی۔ ۔چوتھی گیند پر محمود نے ڈیپ مڈ وکٹ پر کھیل کر دو رنز لیے ۔اور رن آو¿ٹ ہوتے ہوتے بچے کیونکہ تھرو سیدھا وکٹ کیپر کشال کے ہاتھوں میں نہیں پہنچ سکا جبکہ محمود وکٹوں سے کافی دور تھے۔اب دو گیندیں تھیں اور6رنز مطلوب تھے۔محمود اللہ نے پانچویں گیند کو جو مڈل اور لیگ اسٹمپ پر تھی بیک ورڈ اسکوائر لیگ باو¿نڈری کے اوپر کھیلا اور گیر ہوا میں تیرتے ہوئے ناظرین کے درمیان اج گری۔
پورا اسٹیڈیم ششدر اور گنگ رہ گیا اور بنگلہ دیشی کھلاڑیوں نے جو باو¿نڈر پر آکر کھڑے ہو چکے تھے گیند کے میدان سے باہر جاتا دیکھتے ہی میدان میں داخل ہو کرمارے خوشی کے ’ناگن ڈانس‘ شروع کر دیا۔محمود الہ کو ان کی 18بالوں پر تین چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے 43رنز کی میچ وننگ اننگز کے باعث مین آف دی میچ قرار دیا گیا۔

Title: ugly scenes mar bangladeshs dramatic win | In Category: کھیل  ( sports )

Leave a Reply