اشون،پانڈیا کی نوبال کی بدولت ویسٹ انڈیز ٹیم انڈیا کو ہرا کر فائنل میں

ممبئی: لیونارڈ سمنز نے اپنی قسمت کے رتھ پر اڑتے ہوئے اگر اپنی ہاف سنچری اور مین آف دی میچ ایوارڈ پر قبضہ کیا تو دوسری جانب ویسٹ انڈیز کی پوری ٹیم نے سمنز کی قسمت کے سہارے چھٹے ورلڈ کپ ٹی ٹونٹی کے فائنل تک رسائی حاصل کر لی جہاں اس کا مقابلہ انگلستان سے اتوار کو ہوگا۔ یہاں وانکھیڈے اسٹیڈیم میں کھیل گئے ٹونٹی ٹونٹی کے ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں193رنز کے ٹارگٹ کا تعاقب کرتے ہوئے اگرچہ اشیش نہرا اور بومرا پر مشتمل ہندوستانی فاسٹ بولروں کی افتتاحی جوڑی نے پاور پلے کے پہلے تین اووروں میں ہی خطرناک افتتاحی بلے باز کرس گیل اور نہایت تجربہ کار ماروین سیموئل سے چھٹکارہ دلا کر ٹیم انڈیا اور کرکٹ شوقینوں کو پاور پلے ختم ہونے سے پہلے ہی فتح کی خوشبو سونگھا دی تھی۔
لیکن دوسرے افتتاحی بلے باز چارلس کو لیونارڈ سمنز جیسا وہ ساتھی مل گیا جسے ممبئی انڈئینز کی طرف سے آئی پی ایل میں کھیلنے کے باعث وانکھیڈے اسٹیڈیم کی پچ کے مزاج اور میدان کے چپے چپے سے واقفیت تھی اور اس نے چارلس کے ساتھ مل کر نہ صرف 97رنز کی پارٹنر شپ نبھائی بلکہ ویسٹ انڈیز کو فتح کی راہ پر اس طرح ڈالا کہ پھر وہ راہ سے بھٹک نہ سکی اور مزید کوئی وکٹ کھوئے بغیر20ویں اوور کی چوتھی گیند پر ہی منزل تک پہنچ گئی۔ لیکن کالی آندھی کو ہندوستان کی ”وراٹ ٹیم “ پر فتحیاب کرنے میں قسمت کی اس دیوی کا زبردست ہاتھ رہا جو اس وقت جب پورا اسٹیڈیم پاور پلے میں ہی دو خطرناک بلے بازوں سے چھٹکارہ ملنے پر خوشی سے جھوم رہا تھا وہیںوہ قسمت کی دیوی کہیں دور کھڑی مسکرا رہی تھی۔
اور وہ دو بار لیونارڈ سمنز اور خاص طور پر ویسٹ انڈیز پر اس وقت سایہ فگن ہوئی جب سمنز انفرادی اسکور 18رنز پر اشون کی گیند پر تھرڈ مین پر بومرا کے ہاتھوں لپک لیے جانے کے باوجود ناٹ آو¿ٹ قرار دیے گئے کیونکہ اشون کی جس گیند پر وہ آو¿ٹ ہوئے تو وہ نوبال تھی۔ اور انہوں نے جیسے ہی اپنی فف©ٹی پوری کی پانڈیا نے سمنز کو کور میں اشون کے ہاتھوں کیچ آو¿ٹ کر اکے ٹیم انڈیا کے کھلاڑی اور کرکٹ شیدائیوں کو خوشی سے بے قا کردیا لیکن قسمت کی دیوی پھر ابھری اور پانڈیا کی بھی گیند کو نوبال قرار د لوا کر اس نے کھلاڑیوں اور کرکٹ شوقینوں کی خوشیوں پرپھر پانی پھیر دیا۔
اس کے بعد تو پھر قسمت نے ویسٹ انڈیز پر ایسا سایہ کیا کہ ویسٹ انڈیز کو فائنل میں پہنچا کر اور ٹیم انڈیا کی امیدوں کو ملیامیٹ کر کے ہی وہ وانکھیڈے اسٹیڈیم سے رخصت ہوئی۔سمنز 51گیندوں پر7چوکوں اور پانچ چھکوں کے ساتھ 82اور آندرے رسل 20گیندوں پر 3چوکوں اور 4چھکوں کے ساتھ 43رنز بنا کر غیر مفتوح رہے۔ جبکہ چارلس نے 36گیندوں پر سات چوکوں اور دو چھکوں کے ساتھ52رنز بنائے۔ ویسٹ انڈیز کی جانب سے11چھکے لگائے گئے ۔اس سے قبل ڈیرن سیمی کے ذریعہ پہلے بیٹنگ کرنے کے لیے مدعو کیے جانے پر ٹیم انڈیا نے ایک بار پھر وراٹ کوہلی کی 47گیندوں پر 11چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے89رنز کی اننگز کی بدولت صرف2وکٹ کے نقصان پر 192کا ہمالیائی اسکور بنا یا۔
روہت شرما اور اجنکیا رہانے نے 62رنز کی شاندار پارٹنر شپ کر کے جو مضبوط بنیاد فراہم کی تھی اسی پر کوہلی اور دھونی کی جوڑی نے شاندار بلے بازی کرتے ہوئے رنز کی یہ دیوار چنی تھی۔ روہت نے 31گیندوں پر تین چوکے اور اتنے ہی چھکے لگا کر 43اور رہانے نے 35گیندوں پر دو چوکوں کی مدد سے 40رنز بنائے۔ جبکہ دھونی 9گیندوں پر ایک چوکے کے ساتھ 15رنز بنا کر ناٹ آو¿ٹ رہے۔

Read all Latest sports news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from sports and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Two no balls send west indies into final in Urdu | In Category: کھیل Sports Urdu News

Leave a Reply