یہ ایشیا کے باہر ٹیم انڈیا کی سب سے بڑی جیت ہے

انٹی گوا: آف اسپنر روی چندرن اشون کے آل راؤنڈ کھیل اور کپتان وراٹ کوہلی کے ڈبل سنچری سے پہلے ٹیسٹ میں ہندستانی کرکٹ ٹیم کو ویسٹ انڈیز کے خلاف ملی جیت اس کی ایشیا کے باہر سب سے بڑی ٹیسٹ فتح ہے۔ ہندستان نے پہلا ٹیسٹ چار دنوں کے اندر ہی اننگز اور 92 رنز سے جیت لیا۔اس سے پہلے ایشیا کے باہر سال 2005۔06 میں ہندوستان نے زمبابوے کے خلاف اننگز اور 90 رنز سے ٹیسٹ جیتا تھا۔اس کے علاوہ ہندستان کو ایشیا کے باہر اننگز سے ملی یہ کل چوتھی اور ویسٹ انڈیز میں پہلی جیت ہے۔ یہ پہلا موقع بھی ہے جب ویسٹ انڈیز نے اپنی زمین پر اتنے بڑے فرق سے کوئی ٹیسٹ ہارا ہے۔
ان کی گزشتہ بڑی شکست سال 2005 میں جنوبی افریقہ کے خلاف تھی جس میں میزبان ویسٹ انڈیز نے اننگز اور 86 رنز سے میچ ہارا تھا۔گھر میں یہ کیریبین ٹیم کو اننگز سے ملی یہ کل پانچویں شکست ہے۔ایشیا کے باہر ہندستان کی یہ آخری 24 ٹسٹ میچوں میں محض دوسری جیت بھی ہے۔ہندستانی ٹیم نے سال 2011 میں جمیکا میں اور 2014 میں انگلینڈ کے خلاف لارڈس میں ٹیسٹ جیتا ہے۔ ہندستان کو اپنے کھیل سے جیت دلانے والے آف اسپنر اشون کے دوسری اننگز میں 83 رنز پر سات وکٹ کا مظاہرہ ویسٹ انڈیز میں کسی ہندوستانی بولر کی بہترین کارکردگی ہے۔ان سے پہلے سال 1952۔53 میں سبھاش گپتے نے 162 رن پر سات وکٹ لئے تھے۔ایشیا کے باہر اشون کی کارکردگی کسی ہندوستانی کی ٹیسٹ میں مجموعی طور پر تیسری بہترین کارکردگی ہے۔ اشون اسی کے ساتھ ان کھلاڑیوں کی فہرست میں بھی شامل ہو گئے ہیں جنہوں نے ایک ہی ٹیسٹ میں سات وکٹ لینے کے ساتھ ساتھ سنچری بھی بنائی ہے۔یہ کارنامہ محض تین کھلاڑیوں نے کیا ہے جس میں اشون سے پہلے سال 1920۔21 میں انگلستان کے خلاف آسٹریلیا کے جیک گرگور ی نے ملبورن میں اور 1978 میں لارڈس میں پاکستان کے خلاف اور 1979۔80 میں ممبئی میں ہندوستان کے خلاف انگلستان کے آل راؤنڈر ایان باتھم نے انجام دیا تھا۔
وہیں اشون پہلے ہندوستانی ہیں جنہوں نے ایک ہی ٹیسٹ میں سنچری بنانے اور پانچ وکٹ کا کارنامہ دو بار کیا ہے۔ آف اسپنر اشون کو ان کی اس کارکردگی کے لیے مین آف دی میچ منتخب کیا گیا ہے۔یہ پانچواں موقع ہے جب اشون کو نومبر 2011 میں ان کے ڈیبو کے بعد سے ٹیسٹ میں مین آف دی میچ منتخب کیا گیا ہے جو کسی ہندوستانی کا سب سے زیادہ ہے۔ایشیا کے باہر اشون پہلی بار مین آف دی میچ بنے ہیں۔ اشون نے اب تک کیریئر میں 33 ٹیسٹ کھیلے ہیں اور 17 بار پانچ وکٹ نکالے ہیں جو کسی اسپنر کی بہترین کارکردگی ہے۔آسٹریلیا کے گرمیٹ نے 33 ٹسٹ میچوں میں 16 بار پانچ وکٹ لئے ہیں۔اشون اگر اگلے تین ٹسٹ میچوں میں 17 وکٹ اور اپنے نام درج کر لیتے ہیں تو وہ 36 میچوں میں سب سے تیز 200 وکٹ لینے کے گرمیٹ کے ریکارڈ کی برابری کر لیں گے۔ وہیں ایک اور ریکارڈ یہ بھی ہے کہ ہندوستان کے لیے یہ دوسرا موقع ہے جب ایک ہی ٹیسٹ میں اس کے ایک بلے بازنے ڈبل سنچری اورکسی بولر نے سات وکٹ حاصل کرنے کا کارنامہ انجام دیا ۔ انٹی گواٹیسٹ سے پہلے سڈنی میں 2004 میں سچن تندولکر نے 241 رن بنائے تھے اور موجودہ کوچ انل کمبلے نے 141 رن پر آٹھ وکٹ لیے تھے۔(یو این آئی)

Read all Latest sports news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from sports and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Team india record biggest test win outside asia in Urdu | In Category: کھیل Sports Urdu News

Leave a Reply