سری لنکا خراب روشنی کے باعث شکست کے غار میں گرنے سے بال بال بچ گیا

کولکاتا: سری لنکا کے کھلاڑی اس وقت خوشی سے جھوم اٹھے جب فیلڈ امپائروں نیگل لیانگ اور جوئیل ولسن نے خراب روشنی کے باعث پہلے ٹیسٹ کے پانچویں روز کے آخری سیشن کا کھیل عین اس وقت ختم کرنے کا اعلان کر دیا جب ہندوستان جیت سے محض تین وکٹ دور اور سری لنکا شکست کے دہانے پر کھڑا تھا۔
سری لنکا نے جیت کے لیے231رنز کے تعاقب میں کھیل کا وقت کتم ہونے تک 7وکٹ پر75رنز بنا لیے تھے۔اور ہندوستانی فاسڑٹ بولرز خاص طور پر محمد شامی اور بھونیشورکمار ایسی تباہ کن بولنگ کر رہے تھے کہ ان کی سوئنگ ، یارکر اور 145کلومیٹر تک کی رفتار کی بولنگ سے سری لنکا کے بلے بازوں پر کپکپی طاری تھی اور وقفہ وقفہ سے وکٹ گرنے سے جاہں اسٹیڈیم خوشی سے جھوم رہا تھا وہیں سری لنکائی ڈریسنگ روم میں غم و اندوہ کے بادل بتدریج گھنیرے ہوتے جا رہے تھے۔
سری لنکا کو ٹارگٹ کے تعاقب میں پہلا جھٹکا پہلے اوور میں ہی بھونیشور کمار نے سمر وکرما کو زیرو پر آؤٹ کر کے دیا۔چوتھے اوور میں محمد شامی نے دوسرے افتتاحی بلے باز کرونا رتنے کو پویلین کی راہ دکھا کر دوسرا جھٹکا دیا۔ بھونیشور نے جیسے ہی تھریمانے کو 7رنز کے انفرادی اسکور پر آؤٹ کیا تو سری لنکا کے خیمہ میں زبردست کھلبلی مچ گئی۔
آل راؤنڈر اور پہلی اننگز میں شاندار ہاف سنچری بنانے والے جارحانہ انداز میں بیٹنگ کرنے والے اینجلو میتھویز کو امیش یادو نے جیسے ہی آؤٹ کیا سری لنکاکے میچ ڈرا کرنے کے امکانات معدوم پڑنے لگے۔ کیونکہ اس وقت تیم کا اسکور محض22رنز تھا ۔ لیکن چنڈی مل اور ڈیکے نوالا نے 47رنز کی پارٹنر شپ کر کے کسی طرح سری لنکا کے ڈریسنگ روم میں مچی کھلبلی کو دور کرنے کی کوشش کی۔
مگر 69کے ایک اسکور پر چنڈی مل کو محمد شامی نے اور ڈیکے والا کو بھونیشور نے پویلین واپس بھیج کر سری لنکا کو دیوار سے کچھ اور لگا دیا۔اور جیسے ہی پریرا کو بھی بھونیشور نے آؤٹ کیا تو ٹیم انڈیا جیت کے ایک دم جتنے قریب پہنچی سورج کی کرنیں اور روشنی بھی ا تنی ہی تیزی سے اسٹیدیم سے دور ہونے لگیں اور ٹیم انڈیا کی جیت کے امکانات کو بھی اپنے ساتھ لے گئیں۔ ہندوستان کی طرف سے بھونیشور کمار 4وکٹ لے کر کامیاب بولر رہے جبکہ محمد شامی کو دو اور یادو کو ایک وکٹ ملی۔
بھونیشور کمار کو مینآف دی میچ قرار دیا گیا۔اس سے قبل ہندوستان نے سری لنکاکے خلاف تین ٹیسٹ میچوں کی سریز کے پہلے ٹیسٹ میچ کی دوسری اننگز میں کپتان وراٹ کوہلی کی سنچری اور شکھر دھون اور لوکیش راہل کی ہاف سنچریوں کی مدد سے 8وکٹ پر 352رنز پر اننگز ڈکلیر کر دی۔ کوہلی نے 89ویں اوور کی چوتھی گیند پر ایکسٹرا کور کے اوپر سے شاندار چھکے سے کولکاتا کے ایڈن گارڈ پر پہلی اور اپنے انٹرنیشنل کیریر کی 50ویں سنچری مکمل کرے ہی اننگز ختم کرنے کا اعلان کر دیا۔
ان کی سنچری مکمل ہوتے ہی کرکٹ شوقینوں سے کھچا کھچ بھرا اسٹیڈیم تالیوں کی گڑگڑاہٹ سے گونج اٹھا ۔ کوہلی نے 119گیندوں پر درجن بھر چوکوں اور دو چھکوںکی مدد سے104رنز بنائے۔ پہلے50رنز 80گیندوں پر بنانے کے بعد اگلے54رنز انہوں نے صرف39گیندوںپر بنا دیے۔ غور طلب ہے کہ رواٹ کوہلی کے ون ڈے میں 32 اور ٹیسٹ میچ میں 18سنچریاں ہیں۔
کوہلی کے علاوہ لوکیش راہل نے125گندوں پر 8چوکوں کی مدد سے79اور شکھر دھون نے 116گیندوں پر 11چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے94رنز بنائے۔ ہندوستانکی جانب سے پانچ بلے باز ڈبل فیگر میں نہیں پہنچ سکے۔

Read all Latest sports news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from sports and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Sl cling on despite bhuvneshwar and shami bursts in Urdu | In Category: کھیل Sports Urdu News

Leave a Reply