دوسرے ٹیسٹ میں سیریز پر قبضہ کرنے کے ارادے سے اترے گی وراٹ اینڈ کمپنی

کولمبو: (یواین آئی) میزبان سری لنکا کو پہلے ٹیسٹ میں یک طرفہ انداز میں شکست دینے کے بعدپراعتماد وراٹ کوہلی کی نمبر ون ٹیسٹ ٹیم ہندوستان جمعرات سے کولمبو میں شروع ہونے والے دوسرے کرکٹ ٹیسٹ میں بھی جیت درج کرکے تین میچوں کی سیریز پر قبضہ کرنے کے ارادے سے اترے گی۔ ہندوستان نے پہلے ٹیسٹ میں سری لنکا کو 304 رنز سے شکست دے کر ایک۔صفر کی برتری حاصل کرلی ہے اور اب کولمبو ٹیسٹ میں اس کے پاس جیت سے سیریز پر قبضہ کرنے کا موقع ملے گا۔ وہیں میزبان ٹیم کے لیے یہ کرو یا مرو کا میچ ہوگا جس میں واپسی کرکے وہ برابری کرنا چاہے گی۔ وراٹ اینڈ کپتانی میں ٹیم انڈیا نے سال 2015 میں اپنی پچھلی سیریز میں دو۔ایک سے جیت درج کی تھی جو 22 سال میں ہندوستان کے لیے سری لنکا کی سر زمین پر ٹیسٹ سیریز جیتنے کا پہلا موقع تھا۔ لیکن گزشتہ دو سال میں ہندوستانی ٹیم میں کافی تبدیلی آئی ہے اور اسٹار بلے باز وراٹ بھی اب ایک بہترین کپتان بن گئے ہیں جو ٹیسٹ میں کپتانی کے معاملے میں سابق کھلاڑیوں کو پیچھے چھوڑ چکے ہیں۔ ان کے لیے بھی یہ ایک بار پھر خود کی قیادت کو ثابت کرنے کا موقع ہے۔
اگرچہ کپتان کے لیے اوپننگ آرڈر میں انتخاب اس بار پھر دردِ سر ہو سکتا ہے۔ گالے ٹیسٹ سے باہر رہنے والے سلامی بلے باز لوکیش راہل بیماری پر قابو پانے کے بعد اب بالکل فٹ ہیں اور ٹیم میں واپسی کر رہے ہیں۔ ایسے میں شکھر دھون اور ابھینو مکند میں سے کسی ایک کا باہر بیٹھنا طے ہے۔ زخمی مرلی وجے کی جگہ ٹیسٹ ٹیم میں موقع پانے والے دھون نے گالے میں ہندوستان کی پہلی اننگز میں سب سے زیادہ 190 رنز کی زبردست اننگز کھیل کر اپنے انتخاب کو صحیح ثابت کیا تو وہیں مکند نے پہلی اننگز میں 12 رن بنانے کے بعد دوسری اننگز میں 81 رن بنائے تھے۔ اوپننگ آرڈر پر دونوں ہی کھلاڑی بلے سے بہترین کارکردگی پیش کررہے ہیں لیکن امید یہی ہے کہ کپتان آخری الیون میں دھون کو شامل کر سکتے ہیں۔
پچھلی سیریز میں بھی دھون اور مرلی کے زخمی ہونے کے بعد اوپننگ میں راہل اور پجارا کو اوپننگ کرنے کا موقع ملا تھا اور اس بار بھی وہی صورت حال پیدا ہو گئی ہے۔ شکھر کو اگر یہاں کھیلنے کا موقع ملا تو یہ ان کا 25 واں اور پجارا کا 50 واں ٹیسٹ ہوگا۔ وہیں کئی دوسرے کھلاڑیوں کے پاس بھی ریکارڈ بنانے کا شاندار موقع رہے گا۔ اگرچہ کھلاڑیوں کے لئے ذاتی ریکارڈ سے زیادہ اہم ٹیم کی جیت ہے۔بلے بازوں میں اوپننگ ا?رڈر میں دھون، راہل کے علاوہ مڈل آرڈر میں ایک بار پھر چتیشور پجارا، اجنکیا رہانے، کپتان وراٹ اور نچلے آرڈر میں آل راؤنڈرہاردک پانڈیا اور وکٹ کیپر بلے باز ردھمان ساہا اہم ثابت ہوں گے۔ گیندبازی میں گالے میں چھ وکٹ لے کر سب سے کامیاب رہنے والے لیفٹ آرم اسپنر اور ٹیسٹ میں دنیا کے چوٹی کے گیندباز رویندر جڈیجہ کے پاس اپنے 150 ٹیسٹ وکٹ پورے کرنے کا موقع رہے گا۔ تجربہ کار آف اسپنر روی چندرن اشون نے بھی گزشتہ میچ میں چار وکٹ لئے تھے اور اسپنروں میں ٹیم کو ان سے اور جڈیجہ سے کافی امید یں رہیں گی۔تیز گیند بازوں میں امیش یادو، محمد سمیع، ہاردک پانڈیا گیندبازی کی کمان سنبھالیں گے۔
گالے ٹیسٹ کے بعد جہاں ہندوستانی ٹیم کے حوصلے کافی بلند ہیں تو وہیں سری لنکا کی ٹیم پر اپنی ہی سر زمین پر شکست کھانے کا دباؤ ہے۔ اگرچہ کولمبو ٹیسٹ سے ٹھیک پہلے اس کے لیے کپتان دنیش چنڈیمل کی واپسی ایک اچھی خبر ہے۔ دو سال پہلے پچھلی سیریز میں گالے میں 169 گیندوں میں 162 رنز کی اننگز کھیل کر چنڈیمل نے جیت میں اہم کردار ادا کیا تھا۔ وہیں بہترین فارم میں کھیل رہے لا?رو ترمانے کو بھی زخمی اسیلا گنارتنے کی جگہ ٹیم میں بلایا گیا ہے۔ اسیلا کو گالے میں فیلڈنگ کے دوران چوٹ لگ گئی تھی۔ترمانے نے ہندوستان کے ساتھ پریکٹس میچ میں بھی 59 رنز کی اننگز کھیلی تھی۔ گزشتہ میچ میں کارگزار کپتان لیفٹ آرم اسپنر رنگنا ہرات کو بھلے ہی سیریز سے پہلے ہندوستان کے لئے بڑا خطرہ سمجھا جا رہا تھا لیکن وہ گالے میں زخمی ہو گئے اور ان کی جگہ لکشن سندا?ن کو ٹیم میں شامل کیا گیا ہے۔ ہرات کا فٹ نیس کی وجہ سے فی الحال دوسرے میچ میں شامل ہونا مشکوک ہے۔ ان کی جگہ ملنڈا پشپ ?مارا کو کولمبو میں سری لنکا کے لیے ٹیسٹ میں قدم رکھنے کا موقع مل سکتا ہے۔ اگرچہ ہرات کی غیر موجودگی نے میزبان ٹیم کو کافی بڑا جھٹکا دیا جسے دوسرے میچ میں بہت تبدیلیوں کے ساتھ اترنا ہوگا۔ ہندوستان اور سری لنکا کے کولمبو کے میدان پر ویسے ہار جیت کا ریکارڈ کافی ملا جلا رہا ہے اور دونوں ٹیموں نے یہاں کل آٹھ ٹسٹ میچوں میں چار میں ڈرا کھیلے ہیں۔

Read all Latest sports news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from sports and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Second test match between india and sri lanka from tomorrow in Urdu | In Category: کھیل Sports Urdu News

Leave a Reply