ابو کئی روز سے کہہ رہے تھے میرا آخری وقت آن پہنچا ہے:عظیم لیگ اسپنر عبد القاد ر کے بیٹے کا بیان


اسلام آباد: گذشتہ روز دل کا دورہ پڑنے سے انتقال کر جانے والے عظیم لیگ اسپنر عبد القادرکے بیٹے سلمان قادر نے میڈیا کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ”ابو کافی دنوں سے یہ کہنے لگے تھے کہ میرا ٹائم آچکا ہے“۔سلمان نے یہ بھی کہا کہ ان کے والد کو دل کبھی کوئی عارضہ نہیں رہا اور وہ نہایت خوش مزاج تھے اور ہر لحاظ سے صحتمند تھے ۔وہ ہمہ وقت ہنستے ہنساتے رہا کرتے تھے۔لیکن جمعہ کوانہیں اچانک ہی دل کا دورہ پڑا جو اتنا شدید تھا کہ جان لیوا ثابت ہوا۔ سلمان نے کہا کہ اگرچہ انہیں فوراً ہی اسپتال لے جایا گیا لیکن وہہاں ڈاکٹروں نے بتایا کہ وہ اسپتال پہنچنے سے پہلے ہی انتقال کر چکے ہیں۔پاکستان کے معروف کرکٹرز اکمل برادران میں سے ایک عمر اکمل اس عظیم لیگ اسپنر کے داماد تھے ۔ عمر اکمل کی عبد القادر کی اکلوتی بیٹی نور آمنہ سے شادی ہوئی تھی۔ عبد القادر کے پسماندگان میں بیوہ ، چار بیٹے سلمان قادر، عثمان قادر، رحمان قادر اور عمران قادر اور بیٹی نور آمنہ ہے ۔عبد القادر کی وفات پر ہر طرف سے تعزیت کا سلسلہ ہنوز جاری ہے۔ صدر مملکت عارف علوی، وزیر اعظم عمران خان، فوجی سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ، ملک و بیرون ملک کے تمام موجودہ و سابق کرکٹروں نے ،جنہوںنے ان کے ساتھ یا ان کے خلاف کھیلا اورجس نسل نے انہیں کھیلتا دیکھ کر ان سے تحریک پائی اور انہیں پاکستان کے لیے میچ جیتتے دیکھا۔ ان کے غمزدہ خاندان سے اظہار تعزیت و ہمدردی کیا اور کہا کہ وہ ان کے غم میں برابر کے شریک ہیں۔ان سے تحریک پا کر شین وارن، مشتاق احمد، دنیش کنیریا اور انل کمبلے جیسے لیگ اسپنرز افق کرکٹ پر ایسی آب و تاب سے نمودار ہوئے کہ لیگ اسپن کا جادو سر چڑھ کر بولنے لگا ۔15ستمرب1955میں لاہور میں پیدا ہونے والے اس عظیم لیگ اسپنر نے22سال کی عمر میں دسمبر1977کو اپنے انٹرنیشنل کرکٹ کیریر کا آغاز انگلستان کے خلاف لاہور ٹسٹ سے اور اختتام دسمبر کے مہینے میں ہی ویسٹ انڈیز کے خلاف کیا۔انہوں نے 104ون ڈے میچز بھی کھیلے جس میں انہوں نے132وکٹ لیے۔دو بار انہوں نے اننگز میں پانچ وکٹ لیے، جبکہ ٹیسٹ میچوں میں یہی کارنامہ انہوں نے 15بار انجام دیا۔ اور ایک ٹیسٹ میچ میں10یا اس سے زائد وکٹ لینے کا کارنامہ انہوں نے پانچ بار انجام دیا۔ٹسیٹ میچوں میں ان کی بہترین بولنگ 56رنzکے عوض 9وکٹ ہے ۔یہ کارنامہ انہوں نے انگلستان کے خلاف 1987کی سریز میں لاہور میں انجام دیا تھا۔ اور ون ڈے میچوں میں 44رنز کے عوض5وکٹ ہیں۔ان کا ٹیسٹ کرکٹ کیریر 13سال پر محیط رہا اور اس دوران انہوں نے 67ٹسٹ میچ کھیلے اور236وکٹ لیے۔اور اگر اس وقت ڈی آر ایس سسٹم لاگو ہو گیا ہوتا تو ان کی وکٹوں کی تعداد شین وارن اور مرلی دھرن جیسی ہی ہوتیں۔

Read all Latest sports news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from sports and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Salman qadir media talk after his father abdul qadir death in Urdu | In Category: کھیل Sports Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.