ریو اولمپک میں شرکت کے لیے قانونی جنگ کا اب وقت نہیں: روس

کریملن: کھیلوں کے انٹرنیشنل ٹریبونل کے فیصلے سے مایوس روس نے اپنے کھلاڑیوں پر ریو اولمپکس میں پابندی برقرار رکھنے کے فیصلے کے خلاف مزید قانونی جنگ نہ لڑنے کے اشارے دیے ہیں۔
کریملن کی جانب سے جمعہ کو جاری ہوئے بیان میں کہا گیا ہے کہ روس کے کھلاڑیوں کو اولمپک کھیلنے کا ان کا حق دلانے کے لیے اب حکومت کے پاس زیادہ وقت نہیں بچا ہے کیونکہ عدالت ثالثی برائے کھیل کا فیصلہ اولمپک کھیلوں سے محض کچھ ہی دن پہلے آیا ہے۔کریملن کے ترجمان دمتر پیسکوو نے یہاں صحافیوں سے کہا کہ یقینی طور پر کھیل عدالت کا فیصلہ بد بختانہ ور مایوس کرنے والا ہے۔
ہمیں دکھ اس بات کا ہے کہ یہ فیصلہ اولمپک سے چند دن پہلے آیا ہے اور ہمارے پاس اپنی قانونی جنگ کو جاری رکھنے کا وقت ہی نہیں بچا ہے جس سے ہم اپنے کھلاڑیوں کے حقوق کی حفاظت کر سکیں۔واضح رہے کہ دنیا کی سب سے بڑی کھیل عدالت نے جمعرات کو اپنے فیصلے میں روس کے کھلاڑیوں پر ریو اولمپکس میں حصہ لینے پر لگی پابندی کو برقرار رکھا تھا۔
پانچ سے 21 اگست تک برازیل کے ریو ڈی جینرو میں منعقد ہونے والے اولمپک کھیلوں میں روس کے کھلاڑیوں پر پابندی ہے۔سال 2014 میں ہوئے سوچی سرمائی اولمپکس میں ڈوپنگ کے الزام میں یہ پابندی لگائی گئی ہے۔ (یو این آئی)

Read all Latest sports news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from sports and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Russian olympic ban upheld by cas moscow denounces crime against sport in Urdu | In Category: کھیل Sports Urdu News

Leave a Reply