ہند کے خلاف انگلستان کی سریز جیت میں روٹ، مورگن اور عادل چمکے

لیڈز: جوو روٹ کی شاندار سنچری ،کپتان مورگن کی88رنز کی صبر آزما اننگز او ر ان دونوں کے درمیان تیسرے وکٹ کے لیے 186رنز کی غیر مفتوح رفاقت کی مدد سے انگلستان نے ہندوستان کو8وکٹ سے شکست دے کر تین ون ڈے میچوں کی سریز 2-1سے جیت لی۔ پہلا میچ ہندوستان نے8وکٹ سے جیت کر سریز میں1-0کی برتری حا صل کر لی تھی ۔لیکن دوسرے ون ڈے میچ میں جو لارڈز کے میدان پر کھیلا گیا تھا انگلستان نے 86رنز سے جیت کر سریز میں برابری کر لی تھی۔

259رنز ہدف کے تعاقب میں پاور پلے کے 10اووروں میں ہی انگلستان نے 2وکٹ کے نقصان پر78رنز بنا کرمنزل تک پہنچنے کی راہ آسان کر لی تھی۔اس سریز میں پاور پلے کا یہ سب سے زیادہ اسکور تھا۔افتتاحی بلے باز جان بیرسٹو نے اننگز کے آغاز سے ہی ہندوستانی فاسٹ بولروں کی ایسی خبر لی کہ 13گیندوں پر 7چوکوں کی مدد سے30اور ونس کے ساتھ مل کر پہلے وکٹ کے لیے محض28گیندوںپر43رنز بنا کر شردل ٹھاکر کی گیند پر لمبی ہٹ لگانے کی کوشش میں مڈ وکٹ پر سریش رینا کے ہاتھوں لپک لیے گئے اور ہندوستانی کھلاڑیوں نے سکون کا سانس لیا۔

74کے اسکور پر وکٹ کیپر مہندر سنگھ دھونی نے ونس کو انفرادی اسکور27پر ،جو انہوں نے اتنی ہی گیندوں پر پانچ چوکون کی مدد سے بنائے تھے،رن آؤٹ کر دیا۔لیکن اس کے بعد ہندوستانی بولرز ایک منصوبہ کے تحت بیٹنگ کررہے جوو روٹ اور مورگن کو چکمہ دے سکے نہ لالچ دے سکے۔ یہاں تک کہ انگلستان پہنچتے ہی اپنی چائنا میں بولنگ سے سنسنی پھیلانے والے کلدیپ یادو بھی بے بس نظر آئے اور دونوں اسپنرز کو دونوں بلے باز کسی دقت کے بغیر اس طرح کھیل رہے تھے گویاوہ اسپن بولنگ کھیلنے میں زبردست مہارت رکھتے ہیں۔ اس اثنا میں ہندوستانی فیلڈرز کی جسمانی حرکات و سکنات نے صاف بتادیا کہ وہ گھبراہٹ میں مبتلا ہو چکے ہیں اور قبل از وقت ہی شکست تسلیم کر چکے ہیں۔

روٹ 120گیندوںپر 100رنز بناکر مین آف دی سریز بنے ۔انہوں نے اپنی اس اننگز میں 10چوکے لگائے۔جبکہ مورگن نے108گیندوں پر 9چوکوں اور یک چھکے کی مدد سے88رنز بنائے اور دونوں بلے باز غیر مفتوح واپس آئے۔اس سے قبل انگلستان نے ٹاس جیت کر ہندوستان کو پہلے بیٹنگ کی دعوت دی۔لیکن پہلے میچ میں سنچری بنا کر اپنی آمد کا ڈنکا بجانے والے افتتاحی بلے باز روہت شرما دوسرے میچ کی طرح اس میچ میں بھی ناکام رہے اور 18گیندوں پر صرف2رنز ہی بنا کر فاسٹ بولر ولی کی گیند پر آؤٹ ہو گئے۔لیکن شکھر دھون اور کپتان وراٹ کوہلی اسکور کو 84تک لے گئے۔ اس اسکور پر دھون 49گیندوںپر 7چوکوں کی مدد سے44رنز بنا کر رن آؤٹ ہو گئے۔

دنیش کارتک بھی کپتان کا زیادہ دیر تک ساتھ نہ دے سکے اور22بالوں پر3چوکوں کےساتھ21رنز بنا کر لیگ اسپنر عادل رشید کے شکار بن گئے۔اسکور ابھی 150کے پار ہوا ہی تھا کہ کپتان کوہلی بھی عادل کو وکٹ دے بیٹھے۔ کوہلی نے 72گیندوں پر71رنز بنائے اور اس کے لیے انہوں نے8چوکے لگائے۔دھونی نے ایک بار پھر بڑی سست اننگز کھیلی اور 66گیندوں پر بدقت تمام42رنز بنائے ۔ اس دوران وہ صرف چار چوکے ہی لگا سکے۔پانڈیا اور بھونیشور کمار نے 21-21اور شردل ٹھاکر نے 2چھکوں کے ساتھ13گیندوں پر22رنز بنائے اور غیر مفتوح رہے۔ ولی اور عادل رشید نے-3 3وکٹ لیے ۔ لیکن اصل خطرناک بلے بازوں کوہلی، رینا اور کارتک کو آؤٹ کرنے کے باعث عادل رشید کو مین آف دی میچ قرار دیا گیا۔

Read all Latest sports news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from sports and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Root morgan trump spin in englands series win in Urdu | In Category: کھیل Sports Urdu News

Leave a Reply