ٹیم انڈیا اپنے حوصلے اور اعتماد کو برقرار رکھنے کیلئے اترے گی

لندن (یواین آئی) گزشتہ چمپئن ہندوستانی کرکٹ ٹیم نے نیوزی لینڈ کے خلاف پریکٹس میچ میں حیرت انگیز کھیل دکھایا تھا اور اب وہ منگل کو یہاں اوول میدان میں بنگلہ دیش کے خلاف اپنے آخری پریکٹس میچ میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کر کے اہم ٹورنامنٹ سے پہلے اپنے حوصلے اور اعتماد کو برقرار رکھنے کی کوشش کرے گی۔ ہندوستان نے 2013 میں مہندر سنگھ دھونی کی قیادت میں آئی سی سی چیمپئنز ٹرافی کا خطاب جیتا تھا اور اب اس تاج کو بچانے کی ذمہ داری کپتان وراٹ کوہلی پر ہے جو نوجوان اور تجربہ کار کھلاڑیوں کی مدد سے تاریخ دہرانے کا چیلنج سنبھال رہے ہیں۔ ہندوستان کو گروپ بی میں اپنا پہلا ہی میچ روایتی حریف پاکستان سے چار جون کو کھیلنا ہے اور ایسے میں تیاریوں کے لحاظ سے ہندوستان کے پاس بنگلہ دیش کے خلاف منگل کو ہونے والا میچ آخری موقع بھی ہے۔ ہندوستانی ٹیم کے تقریبا تمام کھلاڑی آئی پی ایل میں ڈیڑھ مہینہ کھیلنے کے بعد برطانیہ پہنچے ہیں اور انہوں نے ٹوئنٹی 20 کے بعد بہت کم وقت میں 50 اوور کی شکل میں خود کو ڈھالنے کے خدشات کو پہلے پریکٹس میچ میں اپنے کھیل سے تقریبا دور کر دیا ہے جہاں بارش سے متاثر میچ میں ہندوستان نے ڈک ورتھ لوئیس ضابطے کے تحت 45 رن سے میچ جیتا تھا۔ ٹیم انڈیا نے پہلا پریکٹس میچ نیوزی لینڈ کے خلاف کھیلا جہاں گیندبازی اور بلے بازی میں اس نے متوازن کارکردگی پیش کی۔
فٹنس کے سلسلے میں تشویش کا سبب بنے ہوئے تیز گیند باز محمد سمیع نے اس میچ میں اپنی اہمیت کو ثابت کرکے تین وکٹ حاصل کئے تو آئی پی ایل میں سب سے کامیاب گیندباز رہے تیز گیند باز بھونیشور کمار نے بھی تین وکٹ لئے۔ آئی پی ایل کے دسویں ایڈیشن سے باہر رہے آف اسپنر روی چندرن اشون کی فٹنس پر بھی ناظرین کی نگاہیں تھیں اور انہوں نے کیوی ٹیم کے خلاف میچ میں تسلی بخش گیندبازی سے مثبت اشارہ دیا ہے۔ اشون نے اس میچ میں 5.33 کے اوسط سے 32 رن دے کر ایک وکٹ لیا تھا۔ اس کے علاوہ آئی پی ایل میں اس بار مایوس کن کارکردگی پیش کرنے والے لیفٹ آرم اسپنر رویندر جڈیجہ نے صرف آٹھ رن پر دو وکٹ لے کر متاثر کیا۔ کندھے کی چوٹ کی وجہ سے آئی پی ایل کے ابتدائی کچھ میچوں سے باہر رہے اور پھر ٹورنامنٹ میں بڑی اننگز نہ کھیل سکے کپتان وراٹ کی فارم بھی تشویش کا سبب بنی ہوئی تھی جنہوں نے ناٹ آؤٹ 52 رنز کی اننگز کھیل کر راحت کی سانس دی ہے۔ وراٹ نے 55 گیندوں کی اننگز میں چھ چوکے بھی لگائے۔ اس کے علاوہ شکھر دھون نے 40 رن بنائے تھے۔ اگرچہ گزشتہ میچ میں طبیعت خراب ہونے کی وجہ سے نہ کھیلنے والے آل راؤنڈر یوراج سنگھ اور نجی وجوہات کے سبب دیر سے پہنچے روہت شرما پر بھی اب بنگلہ دیش کے خلاف پریکٹس میں سب کی نگاہیں رہیں گی۔ امید ہے کہ اس میچ میں دونوں کھلاڑیوں کو ایکشن میں دیکھنے کا موقع ملے کیونکہ اس سے پہلے یہ پریکٹس میچ نہیں کھیل سکے ہیں۔
پاکستان کے خلاف پہلے ہی ہائی وولٹیج مقابلے سے قبل بنگلہ دیش کے خلاف یہ میچ ان دونوں بلے بازوں کے لیے تیاری کے لحاظ سے آخری موقع ہوگا۔ یوراج نے آئی پی ایل میں بھی کچھ خاص کارکردگی کا مظاہرہ نہیں کیا تھا اس لئے ان کی فارم پر سب کی نظریں رہیں گی۔ 35 سالہ یوراج نے ہندوستانی ٹیم کے ساتھ اپنا آخری ون ڈے انگلینڈ کے خلاف جنوری میں گھریلو میدان پر کھیلا تھا جہاں انہوں نے 45 رن کی اچھی اننگز کھیلی تھی۔ وراٹ بھی کہہ چکے ہیں کہ مہندر سنگھ دھونی اور یوراج ٹیم کے دو سب سے تجربہ کار کھلاڑی ہیں جن کی سب سے زیادہ اہمیت ہے۔ وہیں آئی پی ایل میں مکمل سیشن کھیلنے اور ٹیم ممبئی انڈینس کو خطاب دلانے والے سلامی بلے بازروہت کے لیے بھی 50 اوور کے فارمیٹ میں خود کو ڈھالنے کے ساتھ ساتھ اس فارمیٹ میں اپنی فٹنس ثابت کرنا بے حد ضروری ہو گا۔ دوسری طرف بنگلہ دیش کو بھی کمزور تصور نہیں کیا جا سکتا ہے جس نے بھلے ہی اپنا پچھلا میچ دو وکٹ سے پاکستان سے گنوایا ہو لیکن اس کے بلے بازوں نے میچ میں حیرت انگیز کھیل پیش کرتے ہوئے 50 اوور میں 341 کا ہمالیائی اسکوربنایا تھا۔اس میں تمیم اقبال، امر القیس اور مشفق الرحیم کی اننگز اہم تھی تو گیند بازوں میں مہدی حسن معراج، مصدق حسین اور شکیب الحسن اس کے اہم کھلاڑی ہیں۔

Read all Latest sports news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from sports and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Rohit sharma to be back in the opening slot in practice match against bangladesh in Urdu | In Category: کھیل Sports Urdu News

Leave a Reply