ممبئی انڈئینز آئی پی ایل چمپین ، بومرا مین آف دی میچ اور رسل مین آف دی ٹورنامنٹ

حیدرآباد: فیصلے کے لیے آخری گیند تک کھیلے گئے میچ میں ڈیتھ اووروں کے ماہر بولروں میں سے ایک لیستھ ملنگا نے آخری اوور کی آخری گیند پر جب چنئی سوپر کنگز کو میچ جیتنے کے لیے دو اور میچ کو سوپر اوور میں لے جانے کے لیے صرف دو رنز کی ضرورت تھی ،مڈل اسٹمپ کو نشانہ بنا کر یارکر گیند کی۔

شردل ٹھاکر نے لیگ سائڈ کی جانب نکلنے والی گیند کو سوئپ کرنے کی کوشش کی لیکن گیند چونکہ کم رفتار کی تھی اس لیے ان کے بلے پر نہ آسکی اور پیڈ پر لگی۔ملنگا سمیت تمام کھلاڑیوں زبردست اپیل کی اور امپائر نے بھی اپنی انگلی اٹھا دی۔ اگرچہ ایسا محسوس ہو رہا تھا کہ گیند لیگ اسٹمپ کو چھوڑتے ہوئے نکل جائے گی ۔لیکن چنئی کی ٹیم ریویو باقی نہ ہونے کے باعث امپائر کے فیصلہ کو چیلنج نہ کر سکی کیونکہ دسویں اوور میں رینا اپنا ریویو ہار چکے تھے۔150رنز کے ٹارگٹ کے تعاقب میں فاف ڈو پلیسس نے واٹسن کے ساتھ مل کر ایسا تیز اسٹارٹ دیا کہ لگ رہا تھا کہ دھونی کی ٹیم شاید 20اوورمکمل ہونے سے بہت پہلے ہی میچ جیتنے کا ارادہ رکھتی ہے ۔

لیکن ڈو پلیسس اور پھر70اسکور پر سریش رینا کے آؤٹ ہونے کے بعد تو گویا دھونی کے لڑکوں نے تو چل میں آیا کی گردان شروع کر دی۔ اور13ویں اوور میں کپتان دھونی بھی فنشر ہونے کا تمغہ لٹکائے رہنے کے باوجود کوئی حکمت عملی وضع نہ کر سکے اور ان کی جسمانی حرکات و سکنات نے یہ اشارے دینا شروع کر دیے کہ چنئی ٹیم جیتنے میں کوئی دلچسپی نہیں رکھتی۔ تاہم کریز پر شین واٹسن کی موجودگی نے امیدیں جگائے رکھی تھیں۔

لیکن آخری اوور میں جب میچ جیتنے کے لیے3 گیندوں پر صرف 5 رنز کی ضرورت تھی ۔لیکن واٹسن نے اسٹرائیک اپنے پاس رکھنے کی کوشش میں غیر ضروری طور پر دوسرا رن ، جو میلوںدور تک نظر نہیں آرہا تھا،لینے کی کوشش کی لیکن خود اس دوسرے رن کی کوشش میں کریز سے میلوں دور رہ کر رن آؤٹ ہو گئے۔

حالانکہ ایسے نازک موقع پر انہیں دوسرے رن کی کوشش کرنے کی کوئی ضرورت ہی نہیں تھی کیونکہ ان کے ساتھ کریز پر موجود کوئی ٹیل اینڈر نہیں بلکہ رویندر جڈیجہ کی شکل میں ایک ایسا بلے باز تھا جو سنچری اور ڈبل سنچری ہی نہیں ٹریپل سنچری تک بنا چکا ہے اور اس قسم کی کرکٹ میں اچھے فنشر کا کردار بھی ادا کر چکا ہے۔

مجموعی اععتبار سے دیکھا جائے تو اگر دھونی کا رن آؤٹ میچ کا ٹرننگ پوائنٹ تھا تو واٹسن کا رن آؤٹ ہوناچنئی کی شکست کے تابوت میں آخری کیل تھا۔واٹسن نے 59گیندونپر 8چوکوں اور چار چھکوں کی مدد سے80رنز بنائے۔فاف ڈو پلیسس نے 13گیندوں پر تین چوکوں اور ایک چھکے کے ساتھ26 اور ڈیرن برائیو نے 15گیندوں پر 15رنز بنائے اور ایک چھکا لگایا۔اس سے قبل ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے ممبئی انڈئینز نے کیرون پولارڈ کی25گیندوں پر تین چوکوں اور اتنے ہی چھکوں کے ساتھ41رنز کی اننگز کی مدد سے 8وکٹ پر 149رنز بنائے۔

ڈی کوک نے 17گیندوں پر چار چھکوں کے ساتھ29، ایشان کشان نے 26گیندوںپر تین چوکوں کے ساتھ23، روہت نے14بالوں پر ایک چوکے اور ایک چھکے کے ساتھ15اور شیو کمار یادو نے بھی17گیندوں پر ایک چوکے کی مدد سے15رنز بنائے۔ چنئی کی طرف سے چاہر تین وکٹ لے کر کامیاب بولر رہے جبکہ عمران طاہر اور شردل ٹھاکر کو د و دو وکٹ ملے۔جسپریت بومرا کو مین آف دی میچ اور آندرے رسل کو مین آف دی سریز قرار دیا گیا۔

Read all Latest sports news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from sports and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Mumbai trump super kings to win record fourth ipl title in Urdu | In Category: کھیل Sports Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.